لندن،سکے جمع کرنے والے نوجوان کی قسمت کھل اٹھی

لندن،سکے جمع کرنے والے نوجوان کی قسمت کھل اٹھی
 لندن،سکے جمع کرنے والے نوجوان کی قسمت کھل اٹھی

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک لڑکے کو سکے جمع کرنے کا شوق تھااور اس کے دادا نے اس کے شوق کو مدنظر رکھتے ہوئے اسے کچھ پرانے سکے دیئے تھے۔ اس کے دادا کے دیئے گئے سکوں میں ایک ایسا نایاب سکہ بھی شامل ہے جس نے اب اسے کروڑ پتی بنا دیا ہے۔ برطانوی اخبار ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق اس نایاب طلائی سکے پر ملکہ اینی ویگو کی تصویر بنی ہوئی ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اس سکے کی مالیت اڑھائی لاکھ پاؤنڈ (تقریباً 3کروڑ روپے) سے زائد ہے، کیونکہ اس میں کی تیاری میں جو سونا استعمال ہوا ہے وہ 1702ء4 میں خلیج ویگو کی جنگ کے دوران سپین کے خزانے کے بحری جہازوں سے قبضہ میں لیا گیا تھا۔دادا نے یہ سکہ اپنے اس پوتے کو دیا جس نے کچھ عرصہ اس کے ساتھ کھیلنے کے بعد اسے ایک ڈبے میں ڈال کر رکھ دیا اور بھول گیا۔ جب اس کے بیٹا پیدا ہوا تو اس نے وہ سکے تلاش کیے اور اپنے بیٹے کو کھیلنے کے لیے دے دیئے۔ پھر ایک روز اسے ماہرین نے بتایا کہ ملکہ اینی ویگو کی تصویر والا یہ ایک سکہ بہت نایاب ہے۔ 18ویں صدی میں اس طرح کے صرف 20سکے بنائے گئے تھے جن میں سے ایک یہ ہے۔رپورٹ کے مطابق یہ شخص ایسیکس کے علاقے سٹارٹ فورڈ کا رہائشی ہے تاہم اس کا نام ظاہر نہیں کیا گیا۔ اس کا کہنا تھا کہ ’’میرے دادا نے پوری دنیا کاسفر کیا تھا۔ اس دوران اس نے مختلف ممالک سے کئی سکے جمع کیے تھے۔ اس نے بچپن میں مجھے ایسے درجنوں سکے دیئے تھے جن کے ساتھ میں کھیلتا تھا۔ جب میں بڑا ہو گیا تو میں نے یہ سکے واپس بیگ میں ڈال کر رکھ دیئے اور بھول گیا۔ جب میرا بیٹا پیدا ہوا تو میں نے اس کے کھیلنے کے لیے یہ سکے دوبارہ ڈھونڈے اور اسے دے دیئے۔ ایک روز بوننگٹن آکشنز کے گریگوری ٹانگ نے یہ سکہ دیکھ لیا اور فوراً اس کی وقعت پہچان لی۔ اس نے مجھے اس کے بارے میں بتایا کہ یہ کتنا نایاب ہے اور اس کی قیمت کتنی زیادہ ہے۔ رپورٹ کے مطابق یہ سکہ آئندہ ماہ نیلامی میں پیش کیا جا رہا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر