لشکر جھنگوی کے پاکستانی جنگجوﺅں نے کوئٹہ حملے میں داعش کی مدد کی: رائٹرز

لشکر جھنگوی کے پاکستانی جنگجوﺅں نے کوئٹہ حملے میں داعش کی مدد کی: رائٹرز
لشکر جھنگوی کے پاکستانی جنگجوﺅں نے کوئٹہ حملے میں داعش کی مدد کی: رائٹرز

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)لشکرجھنگوی کے ترجمان نے کہاہے کہ گروپ کے ایک دھڑے کے پاکستانی جنگجوﺅں نے کوئٹہ میں پولیس ٹریننگ سنٹر پر حملے میں داعش کی مدد کی ۔

رائٹرز کے مطابق دونوں تنظیموں کے درمیان رابطوں سے عراق اورشام میں سرگرم جنگجوگروپ داعش کی پاکستان میں موجودگی کے خطرات بڑھ گئے ہیں جبکہ پاکستانی حکام نے لشکر جھنگوی کے ایک گروہ العالمی کو مورد الزام ٹھہرایااوراس سے پہلے سیکیورٹی حکام کی طرف سے دعویٰ کیاجاچکاہے کہ ملک میں قدم جمانے سے پہلے ہی داعش کا خاتمہ کردیاگیا اور گروپ کے وجود سے بھی انکار کیا جاتارہا۔

لشکرجھنگوی العالمی کے ترجمان علی بن سفیان نے رائٹرز کو بتایاکہ ’ہمارا داعش سے براہ راست کوئی تعلق نہیں لیکن ہم نے یہ حملہ مل کر کیا‘۔مزید تفصیلات فراہم کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہاکہ’ہم اس شخص کی مدد کریں گے جو پاکستانی سیکیورٹی فورسز کیخلاف کہے گااور اس کیلئے امداد قبول بھی کریں گے‘۔

اتحاد ائیرویز نے پاکستانیوں کیلئے ناقابل یقین پیشکش متعارف کروادی،تفصیلات کیلئے یہاں کلک کریں۔

یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ داعش نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے تین جنگجوﺅں کی تصاویر بھی جاری کی تھیں جبکہ اگست میں پاکستان نے العامی کے سربراہ سیدصفدر کی گرفتاری کیلئے معلومات دینے پر پچاس لاکھ روپے انعام کا اعلان بھی کیاتھا ، انہیں یوسف خراسانی کے نام سے بھی جانا جاتاہے۔

مزید : قومی