ایسا مقدمہ سامنے آگیا کہ مسلم دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا، اسلامی دنیا کی معروف ترین مذہبی شخصیت کے درجنوں شاگردوں نے تاریخ کا شرمناک ترین الزام لگادیا

ایسا مقدمہ سامنے آگیا کہ مسلم دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا، اسلامی دنیا کی ...
ایسا مقدمہ سامنے آگیا کہ مسلم دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا، اسلامی دنیا کی معروف ترین مذہبی شخصیت کے درجنوں شاگردوں نے تاریخ کا شرمناک ترین الزام لگادیا

  

تہران(مانیٹرنگ ڈیسک) ایران کے چوٹی کے قاری اور اسلامی دنیا کی معروف ترین مذہبی شخصیت سعید طوسی کو بچوں سے بدفعلی کے الزام میں عدالت میں پیش کر دیا گیا ہے جہاں ان پر فرد جرم عائد کر دی گئی ہے۔ قاری طوسی پر19 بچوں سے بدفعلی کا الزام ہے۔العریبیہ کی رپورٹ کے مطابق ایرانی عدلیہ کے ترجمان غلام حسین محسنی اعجئی نے ایک نیوز کانفرنس میں سعید طوسی کے خلاف کیس عدالت میں بھیجنے کی اطلاع دی اوربتایا کہ ملزم کے خلاف چار متاثرین نے درخواست دائر کی تھی۔ایرانی عدلیہ کے ذرائع نے اس بات کی تصدیق کی ہے قاری طوسی کے خلاف کیس کی کھلے عام سماعت نہیں کی جائے گی۔اصلاح پسندوں کے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ بعض حلقوں کی جانب سے سعید طوسی کو قتل کرنے کی منصوبہ بندی بھی کی جا رہی ہے تاکہ کئی اہم شخصیات کی شہرت کو داغ دار ہونے سے بچایا جاسکے اور اس اسکینڈل کا بھی خاموشی سے خاتمہ کیا جاسکے۔

سکول کے باہر سے نوعمر لڑکی کو اغواءکرکے ایسے خوفناک جنسی تشدد کا نشانہ بنایا گیا کہ احتجاجاً پورے ملک کی خواتین سڑکوں پر آگئیں

رپورٹ کے مطابق سعید طوسی نے دو روز قبل اپنے ایک بیان میں اپنے خلاف عائد کردہ تمام الزامات کی تردید کی تھی۔اس کے بعد عدالتی دستاویزات اورزیادتی کا شکار ہونے والے بچوں کے آڈیو بیانات کی بڑے پیمانے پر تشہیر کی گئی ہے۔ان بچوں نے اپنے استاد سعید طوسی پر الزام عائد کیا کہ وہ بیرون ملک قرات کے بین الاقوامی مقابلوں میں شرکت کے دوران ان سے بدفعلی کرتا رہا ہے۔اصلاح پسندوں کے ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ قاری سعید طوسی نے اپنے خلاف مقدمے کی صورت میں ایران کے100 اعلیٰ عہدے داروں کے نام افشاءکرنے کی دھمکی دی ہے جو اس کے بقول بچوں سے جنسی زیادتی کے مرتکب ہوتے رہے تھے۔

46 سالہ سعید طوسی ایران کی جانب سے حسن قرا¿ت کے متعدد بین الاقوامی مقابلوں میں نمائندگی کرچکے ہیں اور انہوں نے مقامی اور بین الاقوامی سطح پر ان مقابلوں میں کئی انعامات جیت رکھے ہیں۔ وہ ایران کے سپریم لیڈر کے مقرب خاص بتائے جاتے ہیں۔ان پر گذشتہ برسوں کے دوران میں 12 سے 14 سال کی عمر کے19 بچوں سے جنسی زیادتی کے الزامات عائد کیے گئے تھے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس