سالانہ ختم نبوت کانفرنس کی منظور شدہ قرار دادیں

سالانہ ختم نبوت کانفرنس کی منظور شدہ قرار دادیں

*یہ اجتماع لمز یونیورسٹی کے طلباء کی چناب نگر میں پراسرار آمد کو نوجوان نسل کے ایمان پر ڈاکہ زنی اور بدترین قادیانیت نوازی سے تعبیر کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ سرکاری و نجی تعلیمی اداروں میں قادیانیوں کی بڑھتی ہوئی سرگرمیوں کا نوٹس لے۔ *یہ اجتماع مطالبہ کرتاہے آسیہ ملعونہ کو عدالت کے ذریعہ رہا کرانے کے لئے اندرونی و بیرونی طور پر لاوہ پک رہا ہے۔ آئین میں طے شدہ سزا کے مطابق اسے کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔*فوج کا ماٹو جہاد ہے جبکہ قادیانی جہاد اسلامی کے منکر ہیں۔ لہٰذا آئندہ انہیں فوج میں کمیشن نہ دیا جائے۔*کانفرنس کا یہ اجتماع حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ چناب نگر کے باسیوں کو بلا استثناء مالکانہ حقوق دئیے جائیں۔*سیکورٹی پر مورچہ زن رضا کاران ختم نبوت شرکاء کے ساتھ مثالی ڈسپلن، اپنائیت اور خندہ پیشانی سے پیش آتے رہے۔* کانفرنس میں قادیانیوں کو غیر مسلم اقلیت قرار دینے کے حوالہ سے ذوالفقار علی بھٹو مرحوم اور امتناع قادیانیت ایکٹ کے نفاذ کے حوالہ سے صدر ضیاء الحق مرحوم کا تذکرہ خیر بھی ہوتا رہا۔

قرار دادیں

مزید : صفحہ آخر