طور خم پر کاروبار کے فروغ کیلئے کسٹم ایجنٹس کو سہولیات فراہم کی جائیں : ابلان قعلی شنواری

طور خم پر کاروبار کے فروغ کیلئے کسٹم ایجنٹس کو سہولیات فراہم کی جائیں : ابلان ...

خیبر(بیورورپورٹ)لنڈی کوتل،طورخم کسٹم سٹیشن پر کلئیرنس کیلئے فوموگیشن دوبارہ نافذ کرنا ناانصافی ہے جلد ختم کیا جائے،طورخم پر کاروبار کے فروع کیلئے کسٹم ایجنٹس کو سہولیات دی جائے تاکہ ملکی تجارت میں اضافہ ہوجائے۔ابلان علی شینواری،لنڈی کوتل پریس کلب میں کسٹم ایجنٹ ابلان علی شینواری نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آئے روز کسٹم کلئیرنس پر نئے نئے قوانین لاگو ہونے سے طورخم میں تجارت کو کافی نقصان پہنچا ہے اور اب بھی فوموگیسن کی وجہ سے درجنوں مال بردار گاڑیا ں بارڈر کے آس پاس پھنسے ہوئے ہیں جس کی وجہ سے تاجروں اور ٹرانسپورٹرز کو سخے مشکلات کا سامنا ہے انہوں نے کہا کہ پاک افغان طورخم بارڈر تجارت کے لحاظ سے کراچی کے بعد پاکستان کا اہم ترین کاروباری مرکز ہے لیکن افسوس کہ حکام کی ناقص پالیسیوں کے باعث یہاں پر کاروبار میں آئے روز کمی آرہی ہیں انہوں نے کہا کہ چند ماہ پہلے سابقہ کور کمانڈر جنرل نذیر بٹ کے ساتھ فوموگیشن کا مسئلہ اٹھایا تھا اور ایک اہم میٹنگ جس میں کورکمانڈر،کسٹم حکام ،پولیٹیکل انتظامیہ اور کسٹم کلئیرنگ ایجنٹس موجود تھے کیساتھ کامیاب مذاکرات کے بعد فومو گیشن پالیسی کو طورخم بارڈر سے ختم کیا انہوں نے کہا کہ کسٹم ایجنٹ کو کاروبار کے فروع کیلئے یہاں پر سہولیات دی جائے تاکہ ملکی تجارت ترقی کرے آخر میں انہوں نے کور کمانڈر پشاور ،وفاقی وزیر پیر نور الحق قادری اور اعلیٰ حکام سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ طورخم کسٹم سٹیشن سے سپرے نظام کو فی الفور ختم کیا جائے کیونکہ ملک کے کسی بھی بارڈر میں یہ سسٹم لاگو نہیں ہیں.

مزید : پشاورصفحہ آخر