پولیس پالیسی بورڈ بطور پولیس ’’تھینک ٹینک ‘‘ تشکیل دیا گیا ہے : صلاح الدین محسود

پولیس پالیسی بورڈ بطور پولیس ’’تھینک ٹینک ‘‘ تشکیل دیا گیا ہے : صلاح الدین ...

پشاور(کرائم رپورٹر)پولیس پالیسی بورڈ کا 37 واں اجلاس آج سنٹرل پولیس آفس پشاور میں منعقد ہوا۔ انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا صلاح الدین خان محسود نے اجلاس کی صدارت کی۔ بورڈ کے ممبران ایڈیشنل آئی جی پیز ، انوسٹی گیشن، ہیڈ کوارٹرز، کمانڈنٹ ایف آر پی، چیف کیپٹل سٹی پولیس پشاور، ڈی آئی جیز ہیڈ کوارٹرز، آپریشنز، انکوائری اینڈ انسپکشن، ڈائیریکٹوریٹ آف کاؤنٹرٹیرارزم ، ایلیٹ فورس اور ڈائریکٹر انفارمیشن ٹیکنالوجی نے اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس میں سنٹرل پولیس آفس پشاور میں پولیس فورس کے مختلف یونٹوں کے بارے میں تفصیلی بحث و مباحثہ ہوا۔ ڈی آئی جی انکوائری اینڈ انسپکشن نے تمام یونٹوں کی کارکردگی سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی۔ اجلاس کے دوران کئی ایک مسائل زیر بحث آئے اور اس سلسلے میں چندایک اہم فیصلے کئے گئے۔ یہ امر قابل ذکر رہے کہ پولیس پالیسی بورڈ بطور پولیس ’’تھنک ٹینک‘‘ تشکیل دیا گیا ہے جو فورس کی کارکردگی میں بہتری لانے اور فورس کے اہلکاروں کی حالت کار اور اوقات کار مزید بہتر بنانے سمیت دیگربڑے بڑے پالیسی فیصلوں پر غور و خوض کرکے لائحہ عمل اپناتی ہے۔آئی جی پی نے پولیس پالیسی بورڈ کے شرکاء کو ہدایت کی کہ وہ فورس کی بہتری کے لیے اپنے تجربے اور اعلیٰ صلاحیتوں کو بروئے کار لائیں اور فورس کی استعدادی صلاحیتوں میں مزید نکھار لانے، جوانوں کی فلاح و بہبود، اُن کو ترقی کے برابر مواقع فراہم کرنے، مقررہ اہداف کے حصول، حکومت کی عوام کی خدمت کے ایجنڈے کی تکمیل اور درپیش جدید دور کے چیلنجوں سے بطریق احسن نمٹنے کے لیے دور رس نتائج کے حامل پالیساں وضع کریں۔ بورڈ کے ممبران کو عوامی شکایات کے فوری ازالے کے لیے تمام یونٹوں کی موثر نیٹ ورکنگ کرنے کی بھی ہدایت کی گئی تاکہ عوامی پولیسنگ کے معیار کو مزید بہتر اور موثر نگرانی کو یقینی بنایا جاسکے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر