جعل سازی کے واقعات سے دنیا میں ہماری کیا عزت رہ گئی ؟ جسٹس آصف سعید کھوسہ

جعل سازی کے واقعات سے دنیا میں ہماری کیا عزت رہ گئی ؟ جسٹس آصف سعید کھوسہ

اسلام آباد(صباح نیوز)سپریم کورٹ کے سینئر ترین جج جسٹس آصف سعید کھوسہ نے برطانیہ کی جیل سے جعلی دستاویز ات پیش کر کے قیدی کو پاکستان لانے کے مقدمے کی سماعت کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیا میں ہمارے ملک کی کیا عزت رہ گئی ہے؟ ان کا کہنا تھا کہ صرف اس ایک واقعہ کی وجہ سے اب ہزاروں پاکستانی دنیا بھر کی جیلوں میں سڑ رہے ہیں ۔جسٹس آصف سعید کھوسہ اور جسٹس منصور علی شاہ پر مشتمل عدالت عظمی کے دو رکنی بنچ نے ملزمان علی محمد ملک اور قمر عباس گوندل کی بریت کے خلاف درخواستوں کی سماعت کی ۔ ایف آئی اے کے وکیل نے بتایا کہ دوسرے ملک کے ساتھ جعل سازی کر کے قیدی قمر عباس گوندل کو پاکستان منتقل کیا گیا ۔ قمر عباس کی برطانوی جیل سے پاکستان منتقلی وزارت داخلہ کے سیکشن آفیسر علی محمد ملک کی جانب سے داخل کرائے گئے بوگس کاغذات پر میں عمل میں لائی گئی ۔

آصف سعید کھوسہ

مزید : صفحہ آخر