نشترمیڈیکل یونیورسٹی،7پروفیسرز کو ڈیرہ نہ بھیجنے کا فیصلہ نئی بھرتیوں پر غور

نشترمیڈیکل یونیورسٹی،7پروفیسرز کو ڈیرہ نہ بھیجنے کا فیصلہ نئی بھرتیوں پر غور

ملتان(وقائع نگار)پی ایم اے ملتان کا احتجاج رنگ لے آیا۔نشتر میڈیکل یونیورسٹی کے تین پروفیسرز اور چار ایسوسی ایٹ پروفیسرز کے ڈیرہ غازی خان میڈیکل کالج ٹرانسفر روک دیے گئے۔پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن ملتان کے صدر پروفیسر ڈاکٹر مسعود الروف ہراج نے بیان میں(بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

کہا ہے کہ گورنر پنجاب، وزیر صحت پنجاب اور ملتان کی ڈاکٹرز کمیونٹی کے شکر گزار ہیں۔ پی ایم اے ملتان کے دو ہفتے سے جاری پر امن احتجاج کا نوٹس لیتے ہوئے سیکرٹری صحت پنجاب نے نشتر میڈیکل یونیورسٹی سے ہونے والے 7 پروفیسرز کے ٹرانسفر روک دیے۔جبکہ وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی کو ہدایات جاری کی ہیں کہ دو ماہ کے اندر ڈاکٹرز کی تمام آسامیوں پر بھرتی مکمل کی جائے۔ڈی جی خان میڈیکل کالج میں بھی نئی بھرتیاں کی جائیں گی۔نشتر میڈیکل یونیورسٹی سے جو ڈاکٹرز اپنی رضامندی دیں گے ان کی نئی بھرتیاں مکمل ہونے تک عارضی ڈیوٹی لگائی جائے گی۔پروفیسر ڈاکٹر مسعود الروف ہراج نے کہا کہ یہ تمام ڈاکٹرز کمیونٹی کی فتح ہے۔ملتان کے سینیئر اور جونیئر ڈاکٹرز کے مسائل کے لئے ہر فورم پر جدوجہد جاری رکھیں گے۔کارڈیالوجی ہسپتال کے ڈاکٹرز کے ٹرانسفرز بھی جلد واپس کرائیں گے۔پی ایم اے ملتان گورنر پنجاب،منسٹر ہیلتھ پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد، وزیر توانائی ڈاکٹر اختر ملک،ممبر پنجاب اسمبلی سلیم اختر لابر،وسیم خان بادوزئی،سیکرٹیری صحت پنجاب کے بھی شکر گزار ہیں جنہوں نے جنوبی پنجاب کی واحد نشتر میڈیکل یونیورسٹی کے مسائل سمجھتے ہوئے حل کے لئے اپنی مثبت کوششیں کی ہیں۔

نشتر میڈیکل یونیورسٹی

مزید : ملتان صفحہ آخر