وزراء کی بے رُخی پر تحریک انصاف کے متحرک کارکن پریشانی سے دوچار

وزراء کی بے رُخی پر تحریک انصاف کے متحرک کارکن پریشانی سے دوچار

لاہور(شہزاد ملک) پاکستان تحریک انصاف کے متحرک کارکنوں اور الیکشن ہارنے والوں کو پی ٹی آئی کے وزراء نے لفٹ کروانی چھوڑ دی ہے جس کی وجہ سے پی ٹی آئی کے سر گرم کارکنوں میں اس وقت شدید مایوسی کی لہر پائی جاتی ہے فی الحال اپنا نام ظاہر نہ کرتے ہوئے پی ٹی آئی کارکنان کا کہنا ہے کہ واقعی ہی تبدیلی آ گئی ہے ہماری پارٹی کی حکومت تو بن چکی ہے اور ہماری پارٹی کے بیشترز لیڈر وزراء بھی بن چکے ہیں لیکن ان وزراء کی اکثریت نے حکومت میں آنے کے بعد یا تو اپنے موبائل فون نمبرز تبدیل کر لئے ہیں یا پھر نمبر بند کر لئے ہیں اور جن وزراء نے اپنے نمبرز تبدیل نہیں بھی کئے ہیں تو انہوں نے بھی ہمارا فون اٹینڈ کرنا ہی چھوڑ دیا ہے اور اگر ان کے سٹاف تک رسائی کرکے انہیں بھی پیغام دیا جائے تب بھی وزراء کی جانب سے ہمیں کسی قسم کی کوئی لفٹ نہیں کروائی جارہی ہے۔ان کارکنان کا کہنا ہے کہ ہم گلی محلوں کی سطح پر رہنے والے ورکرز ہیں جن لوگوں سے ہم الیکشن کے وقت اپنے لیڈروں کے لئے ووٹ مانگتے رہے ہیں وہی لوگ اب جب ہمیں اپنے کاموں کے سلسلے میں اپروچ کرتے ہیں تو ہمارے پاس انہیں جواب دینے کے علاوہ کوئی اور چارہ نہیں ہوتا اگر ہم ان کو یہ کہتے ہیں کہ ہمارے وزراء تو ہمارا فون ہی اٹینڈ نہیں کرتے ہیں تو وہ اس بات پر بھی ہمارا مذاق اڑاتے ہیں اور ہمیں کہتے ہیں کہ کیا یہ ہی پی ٹی آئی کی تبدیلی اور اس تبدیلی کیلئے آپ ہم سے ووٹ مانگا کرتے تھے ۔ان کارکنان کا پی ٹی آئی کی لیڈر شپ بالخصوص وزیراعظم عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ ایسا سسٹم بنایا جائے کہ جس سے کارکنوں اور وزراء کے مابین فاصلوں کو کم کیا جا سکے ان کارکنون نے تجاویز دی ہے کہ وزراء کو پابند کیا جائے کہ ہر وزیر ہفتے میں ایک بار اپنے محکمے کی کھلی کچہری لگائے اور اس کا انعقاد پارٹی کے سیکرٹریٹ میں منعقد کرے تاکہ اس طرح سے ورکرز اور ان کے مابین رابطہ قائم ہو سکے۔

تحریک انصاف / کارکن پریشان

مزید : صفحہ اول