اسٹینڈرڈ چارٹرڈ کانو ماہ کے عرصہ کے لیے مالی نتائج کا اعلان

اسٹینڈرڈ چارٹرڈ کانو ماہ کے عرصہ کے لیے مالی نتائج کا اعلان

کراچی(اکنامک رپورٹر)اسٹینڈرڈچارٹرڈ بینک (پاکستان) لمٹیڈنے 30ستمبر، 2018ء کو ختم ہونے والے نو ماہ کے عرصہ کے لیے مالی نتائج کا اعلان کر دیا ہے۔بینک نے بنیادی طور پر قبل از ٹیکس منافع میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے جو 12.6 ارب پاکستانی روپے رہا جبکہ گزشتہ برس ، اسی عرصہ کے لیے، یہ منافع 10.6 ارب پاکستانی روپے تھا، جس سے ایئر آن ایئرکے لیے 20 فیصد اضافہ ظاہر ہوتا ہے۔ریونیومیں مجموعی اضافہ 5 فیصد تھا جب کہ کلائنٹ سے حاصل ہونے والے ریونیو میں ، ایئر آن ایئر کی بنیاد پر، 9 فیصد اضافہ ہوا جو ٹرانزیکشن بینکاری، فنانشل مارکیٹس اور ریٹیل ڈپازٹس کے شعبوں سے مثبت اشارے ہیں۔بینک کے تمام کاروباری شعبوں میں ، بنیادی محرکات سمیت، کلائنٹ سے ہونے والی آمدنی میں مثبت تحریک نظر آئی اوراس بات کا اظہار نیٹ ایڈوانسز میں ہونے والے اضافے سے ہوتا ہے جن میں، سال کے آغاز سے اب تک، 8 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ مختلف نوعیت کی پروڈکٹس کے ذریعے بینک اپنے کلائنٹس کی ضروریات پورا کرنے کے لیے بہتر پوزیشن میں ہے۔واجبات اور ذمہ داریوں کے حوالے سے بینک کے کل ڈپازٹس میں 9 فیصد اضافہ ہوا ہے جب کہ کرنٹ اور سیونگز اکاؤنٹس میں بھی ، اس سال کے آغاز سے اب تک، 10 فیصد اضافہ ہوا ہے۔لو کاسٹ ڈپازٹس میں مسلسل اضافے سے بینک کی کارکردگی کو نمایاں مدد ملی کیوں کہ کرنٹ اور سیونگز اکاؤنٹس میں 93 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر