مضر صحت تیل تیارکرنے ،پرانی دالوں کو رنگنے پر 3فیکٹریاں سربمہر

مضر صحت تیل تیارکرنے ،پرانی دالوں کو رنگنے پر 3فیکٹریاں سربمہر

لاہور(کامرس رپورٹر)ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی کیپٹن (ر) محمد عثمان کی سر براہی میں ٹیموں نے خفیہ آپریشن کرتے ہوئے جانوروں کی باقیات سے تیل تیار کرنے پر فیکٹری،پرانی دالوں کورنگنے پر 3 فیکٹریاں سربمہرکردیں۔تفصیلات کے مطابق غیر معیاری انتظامات پر معروف جوس فیکٹری کو بھاری جرمانہ اور12,000 لیٹر سے زائد تیل، 2500 کلورنگی دالیں برآمد کر کے تلف کر دی گئیں۔بھگتاں والا میں بسم اللہ چکن فیڈ اورچکن فیڈ نامی مل،سرگودھا میں پرانی دالوں کو رنگنے پر 3 فیکٹریاں سیل کر دی گئیں۔سویٹس پیپس پروڈکشن یونٹ کوسر بمہر کیا گیا۔ سٹرو پاک کو فروٹ اور پلپ کی ناقص سٹوریج پر 2 لاکھ جرمانہ عائد کیا گیا۔

مضر صحت رنگوں سے رنگی 2500 کلو دالیں اور دیگر اشیاء برآمد کر کے تلف کروا دی گئیں۔12000لیٹر سے زائد غیر معیاری خوردنی تیل برآمد کر کے بائیو ڈیزل کمپنی کے حوالے کر دیا گیا۔

ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا تھا کہ باقیات سے نکلا تیل گندے تیل میں ڈالا جاتا ہے جس سے معدے کے کینسر کا خدشہ بڑھ جاتا ہے۔ ملاوٹ ایک ناسور ہے جس کے مافیا کے مکمل خاتمے کے لیے پوری طاقت سے متحرک ہیں۔کیپٹن (ر)محمد عثمان نے واضح کیا کہ ملاوٹ مافیا پنجاب کے کسی کونے میں ہوکسی صورت پنجاب فوڈ اتھارٹی سے بچ نہیں سکتا۔رواں ماہ سرگودھا میں صحت دشمن عناصر کے خلاف کی جانے والی یہ دوسری بڑی کارروائی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1