آپ کے پاﺅں آپ کی صحت کے بارے میں کیا بتاتے ہیں؟ وہ بات جو آپ کو ضرور معلوم ہونی چاہیے

آپ کے پاﺅں آپ کی صحت کے بارے میں کیا بتاتے ہیں؟ وہ بات جو آپ کو ضرور معلوم ...
آپ کے پاﺅں آپ کی صحت کے بارے میں کیا بتاتے ہیں؟ وہ بات جو آپ کو ضرور معلوم ہونی چاہیے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ہمارے پاﺅں ہماری صحت کے بارے میں کیا بتاتے ہیں؟ ایک برطانوی ماہر ڈاکٹر نے اس سوال کا ایک انتہائی مفید جواب دیا ہے جو ہر کسی کو معلوم ہونا چاہیے۔ میل آن لائن کے مطابق ڈاکٹر ڈان ہارپر کا کہنا ہے کہ ”پیروں کی شکل سے لے کر ناخنوں کی رنگت تک ہر چیز انتہائی اہم ہے اور ہمیں انہیں نظرانداز نہیں کرنا چاہیے۔پیروں کی شکل کی بات کی جائے تو جب ہم پاﺅں زمین پر رکھتے ہیں توانہیں نیچے سے خم دار ہونا چاہیے۔بسااوقات انسان کے پاﺅں پیدائشی طور پر فلیٹ ہو سکتے ہیں تاہم ایسے پیر جو پورے کے پورے فرش پر لگ جائیں کئی طرح کے عارضوں کی نشاندہی بھی کرتے ہیں۔ یہ ٹوٹی ہوئی یا اپنی جگہ سے ہٹی ہوئی ہڈی کی بھی علامت ہوتے ہیں اور بعض اوقات خطرناک قسم کے عصبی مسائل کی بھی۔ چنانچہ اگر آپ کے پاﺅں پیدائش کے بعد فلیٹ ہوئے ہیں تو آپ کو لازمی چیک اپ کروانا چاہیے۔“

ڈاکٹر ڈان ہارپر کہتی ہیں کہ ”پیروں کا رنگ بھی باقی جسم کی رنگت جیسا ہونا چاہیے۔ کبھی کبھار پیروں کا رنگ نیلا پڑ سکتا ہے تاہم اگر ہمیشہ پیر نیلے رہنے لگ جائیں تو اس کا مطلب ہے کہ ان میں خون کی گردش ٹھیک نہیں ہو رہی۔ اپنے پاﺅں کے انگوٹھے کے گوشت والے حصے کو کچھ دیر دبا کر رکھیں اور پھر چھوڑ دیں۔ چھوڑتے ہی اگر فوراً اس جگہ کی رنگت واپس اصلی حالت میں آجائے تو ٹھیک ، ورنہ سمجھ لیں کہ آپ کے جسم کو دوران خون کا مسئلہ درپیش ہے۔اسی طرح پیروں کا ہمہ وقت سرد رہنا بھی اس بات کی علامت ہے کہ ان میں خون کی گردش مناسب نہیں ہو رہی۔ اس چیز کو کبھی نظر انداز نہیں کرنا چاہیے کیونکہ اگر یہ عارضہ شدید ہو جائے تو اس سے عضو مردہ بھی ہو سکتا ہے۔“

ڈاکٹر ہارپر کا مزید کہنا تھا کہ ”خواتین میں ناخنوں کی زرد رنگت نیل پالش کے کثرت استعمال کی وجہ سے بھی ہو سکتی ہے تاہم ہمیں اس پر نظر رکھنی چاہئیں۔ اگر فطری طور پر ناخنوں کا رنگ زرد ہو جائے تو یہ فنگل انفیکشن کی علامت بھی ہو سکتا ہے۔ زیادہ تر لوگوں میں فنجائی ناخن کے سامنے یا اطراف کے حصوں میں پیدا ہوتی ہے۔ یہ ان لوگوں کو زیادہ لاحق ہوتی ہے جن کا مدافعتی نظام کمزور ہو اور یہ کسی سنجیدہ بیماری کا پیش خیمہ بن سکتی ہے۔اس کے علاوہ اگر آپ کے پاﺅں ہمیشہ خشک اور پھٹے ہوئے رہتے ہیں تو یہ بھی کوئی اچھی علامت نہیں ہے۔ یہ پیروں میں چکنائی کے ٹشوز کی کمیابی کی نشاندہی کرتی ہے۔ پیروں سے بدبو بھی فنجائی لاحق ہونے کی ایک علامت ہوتی ہے۔ جن لوگوں کے پاﺅں زیادہ گیلے رہتے ہیں وہ بھی اس کے زیادہ شکار ہو سکتے ہیں۔پیروں سے بدبو کے شکار لوگوں کو اپنی جرابیں روزانہ تبدیل کرنی چاہئیں۔ڈاکٹر بھی اس سلسلے میں آپ کی کافی مدد کر سکتے ہیں۔“

مزید : تعلیم و صحت