پنجگور کے طلباء کا بلوچستان یونیورسٹی واقعہ کے خلاف احتجاج 

  پنجگور کے طلباء کا بلوچستان یونیورسٹی واقعہ کے خلاف احتجاج 

  

پنجگور (این این آئی) پنجگور کے طلباء کا بلوچستان یونیورسٹی واقعہ کے خلاف احتجاج،ریلی ماڈل چوک پر جلسہ اور بلوچستان یونیورسٹی کے وائس چانسلر کی برطرفی کا مطالبہ کیاگیا ریلی میں کالج کے طلباء سمیت دی او ئیسس اسکول کے بچوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی احتجاجی جلسہ سے اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کمیٹی پنجگور کے آرگنائزر خلیل نور ڈپٹی آرگنائزر ظہیر عمرانی عارف خیر،تابش سلیم شہباز الطاف،شاہد ملک ظہور ملنگ خلیل بلوچ،فرج بلوچ،ِخادم اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان یونیورسٹی میں طلباء وطالبات کو ہراساں کرنے کی مذمت کرتے ہیں وزیر اعلیٰ بلوچستان صرف نام کے وزیر اعلیٰ ہیں اس اہم مسلے پر ان کی خاموشی سمجھ سے بالاتر ہے انہوں نے کہا کہ بلوچستان یونیورسٹی میں ہراسنگی کا واقعہ حکومت کے ماتے پر ایک بدنما کلنک ہے لوگوں نے اپنی بچیوں کو یہ سمجھ کر یونیورسٹی بھیجا کہ انہیں وہاں ایک پدرانہ ماحول میسر آئے گی لیکن بدقسمتی سے ان سے وہ سلوک روا رکھا گیا جو انتہا ہی تکلیف دہ اور ہمارے معاشرے پر ایک بد نما داغ کی مانند ہے انہوں نے کہا کہ تعلیمی اداروں کو تعلیم کی حد تک رہنے دیا جائے یونیورسٹی واقعہ میں ملوث افراد کسی رعایت کے مستحق نہیں ہیں ان کے خلاف غیرجانبدارانہ کمیٹی کے ذریعے تحقیقات کرکے بلوچستان کے طلباء وطالبات کا مستقبل محفوظ بنایا جائے۔

 احتجاج 

مزید :

صفحہ آخر -