سپریم کورٹ کی وفاقی حکومت کو آزادکشمیر کو بجلی دینے پر ٹیکس وصولی کامعاملہ ایک ماہ میں حل کرنے کی ہدایت

سپریم کورٹ کی وفاقی حکومت کو آزادکشمیر کو بجلی دینے پر ٹیکس وصولی کامعاملہ ...
سپریم کورٹ کی وفاقی حکومت کو آزادکشمیر کو بجلی دینے پر ٹیکس وصولی کامعاملہ ایک ماہ میں حل کرنے کی ہدایت

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے وفاقی حکومت کو آزادکشمیر کو بجلی دینے پر ٹیکس وصولی کامعاملہ ایک ماہ میں حل کرنے کی ہدایت کردی عدالت نے کہاکہ ایڈیشنل اٹارنی جنرل اورڈپٹی اٹارنی جنرل حکومت کو معاملے کی اہمیت سے آگاہ کریں۔

نجی ٹی وی کے مطابق سپریم کورٹ میں آزادکشمیرکوبجلی دینے پرٹیکس وصول کرنے کے معاملے پر سماعت ہوئی،عدالت نے کہاکہ آئیسکو اور ایف بی آر وفاقی حکومت کے ماتحت ادارے ہیں، وفاقی حکومت قانون کے مطابق بجلی پر سیلزٹیکس وصولی کا معاملہ حل کرے، جسٹس عمر عطا بندیال نے کہاکہ یہ حکومت پاکستان اور حکومت آزاد کشمیر کے درمیان معاہدے کامعاملہ ہے،جسٹس عمرعطا بندیال نے ڈپٹی اٹارنی جنرل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہاکہ اس معاہدے میں مسئلہ آپ کی وجہ سے ہورہا ہے،وکیل آزاد کشمیر علی سبطین نے کہاکہ جی بالکل، آزاد کشمیر اپنے شہریوں سے بجلی پرسیلز ٹیکس وصول کررہا ہے،عدالت نے ایک ماہ میں کابینہ،وزارت توانائی اوروزارت خزانہ کو معاملہ حل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ ایڈیشنل اٹارنی جنرل اورڈپٹی اٹارنی جنرل حکومت کو معاملے کی اہمیت سے آگاہ کریں۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -