اگر حکومت کو غیرمستحکم کریں گے توکوئی کام نہیں کرپائیں گے:شاہ محمودقریشی

اگر حکومت کو غیرمستحکم کریں گے توکوئی کام نہیں کرپائیں گے:شاہ محمودقریشی
اگر حکومت کو غیرمستحکم کریں گے توکوئی کام نہیں کرپائیں گے:شاہ محمودقریشی

  

اسلا م آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا ہے کہ ہم نے تجویز پیش کی تھی کہ آئیں ،بیٹھ کر بات کریں۔ اگر حکومت کوغیرآئینی طریقے سے غیرمستحکم کریں گے توکوئی کام نہیں کرپائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ دھماکوں کے پیچھے مشرقی پڑوسی کا ہاتھ ہوسکتا ہے۔ 

نجی ٹی وی جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ بھارت کی معیشت کو دھچکا لگاہے،وہ اس سے توجہ ہٹاناچاہتاہے

اس ماحول میں کیاگفتگو ہوسکتی ہے؟اس ماحول میں بھارت سے مذاکرات کاامکان دکھائی نہیں،مقبوضہ کشمیرکی موجودہ صورتحال میں تو مذاکرات بے معنی ہیں،بھارت کی ڈبل گیم نئی نہیں ہے،بھارت ہمیشہ سے چالیں چلتاآیاہے۔ان کا کہنا تھا کہ ملک میں دھماکوں کے پیچھے امن عمل میں رخنہ اندازی پیدا کرنیوالے اورمشرقی پڑوسی ہوسکتا ہے۔5اگست 2019کو بھارت نے یکطرفہ غیرقانونی اقدامات اٹھائے،بھارت اندرونی معاشی اوردیگر مسائل سے توجہ ہٹانے کی کوشش کررہاہے۔

شاہ محمودقریشی نے کہا کہ اگر کسی حکومت کوغیرآئینی طریقے سے غیرمستحکم کریں گے توکوئی حکومت کام نہیں کرپائے گی۔اگرآج حکومت کوغیرآئینی طریقے سے گھربھیجاجائے گا توکل آپ کی حکومت کوکون تسلیم کرے گا؟ان کا کہنا تھا کہ ہم نے تجویز پیش کی تھی کہ آئیں انتخابی اصلاحات پر بات کریں،انتخابات ایک جمہوری عمل ہے، بیٹھ کر اس کا راستہ تلاش کرتے ہیں۔

مزید :

قومی -