گیس کی قیمتوں میں 194 فیصد اضافے کیخلاف جماعت اسلامی کامظاہرہ 

   گیس کی قیمتوں میں 194 فیصد اضافے کیخلاف جماعت اسلامی کامظاہرہ 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

پشاور(سٹی رپورٹر) جماعت اسلامی پی کے 81 کے زیر اہتمام گیس کی قیمتوں میں 194 فیصد اضافے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کوھاٹی چوک پشاور میں منعقد ہوا جس کی قیادت جماعت اسلامی خیبرپختونخوا کے سیکرٹری اطلاعات سید جماعت علی شاہ،پی کے 81 کے امیدوار خالد گل مہمند اور جماعت اسلامی پی کے 81 کے امیر شہزاد احمد نے کی مظاہرے سے جماعت اسلامی کے قائدین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جماعت اسلامی سی این جی اسٹیشنز کے ہر احتجاجی کال کی حمایت کرتی ہے اور بھرپور ساتھ دیگی۔سی جی این صنعت کو بند ہونے نہیں دینگے۔ انہوں نے کہا کہ نگران حکومت نے گزشتہ حکومتوں کو بھی پیچھے چھوڑ دیا ہے انہوں نے کہا کہ جب سے نگران حکومت آئی ہے، آئے دن قیمتوں میں اضافہ دیکھنے میں ایا ھے انہوں نے کہا کہ پچھلی حکومتوں نے عوام کا بیڑہ غرق کیا، رہی سہی کسر نگران حکومت پوری کررہی ہےانہوں نے کہا کہ گیس کی قیمتوں میں 194 فیصد اضافے سے عام عوام متاثر ھوگی انہوں نے کہا ویسے بھی گھریلو صارفین کیلئے گیس میسر نہیں اب سی این جی اسٹیشنز بھی گیس کی قیمت میں اضافے کے بعد بند ھو جائینگے انہوں نے کہا کہ سی این جی اسٹیشنز نے ایک صنعت کی شکل اختیار کی ھے ان صنعتوں کو نگران حکومت تباہی کے دہانے پر لانے کی کوشش بند کرے انہوں نے کہا کہ سی این جی اسٹیشنز کے ساتھ ہزاروں افراد وابستہ ہیں جس سے انکے گھروں کے چولہے جلتے ہیں گیس مہنگا ہونے کی وجہ سے اسکا اثر ٹرانسپورٹ کے کاروبار پھر بھی پڑے گا جس سے کرایوں میں اضافہ ہوگا انہوں نے کہا کہ ایک گیس سے کئی صنعتیں وابستہ ہے گھریلوں صارفین بھی ایک نئی مشکل میں پڑ گئے ہیں انہوں نے کہا کہ حکومت فی الفور گیس کی قیمتوں میں اضافے کا نوٹیفکیشن واپس لے اور سی این جی اسٹیشنز اور ٹرانسپورٹروں کو با عزت روزگار کرنے دیں۔