38لاکھ امیر افراد کو ٹیکس نیٹ میں لانے کےلئے اقدامات اٹھائیں گے:ایف بی آر

38لاکھ امیر افراد کو ٹیکس نیٹ میں لانے کےلئے اقدامات اٹھائیں گے:ایف بی آر

اسلام آباد (اے پی پی) فیڈرل بورڈ آف ریونیو ( ایف بی آر) کے چیئرمین علی ارشد حکیم نے کہا ہے کہ ملک کے اندر 38 لاکھ امیر اور بااثر ٹیکس نادہندگان کو بھی ٹیکس کے دائرہ کار میں لانے کے لئے جلد اقدامات اٹھائیں گے۔ انہوں نے تسلیم کیا کہ ایس آر او کلچر ایڈہاک ازم ہے حالانکہ اس کا مقصد معیشت کو مضبوط بنانا ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت ملک میں 38 لاکھ لوگ ایسے ہیں جو اچھا کماتے ہیں ، اچھی جگہوں پر رہائش رکھتے ہیں اور سال میں دو مرتبہ بیرونی دورے کرتے ہیں ۔ ہم ان کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لئے اقدامات اٹھا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کچھ ایسی دولت بھی ہے جو ملک سے باہر ہے ہم اس کو بھی ٹیکس نیٹ میں لانا چاہتے ہیں ۔اس حوالے سے دو سکیموں پر غور کیا جارہا ہے۔ پی اے سی کے چیئرمین ندیم افضل چن نے کہا کہ ایس آر او کلچر پر ایف بی آر پی اے سی کو تفصیلی بریفننگ دے انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کی منظوری کے بغیر ایس آر او جاری نہیں ہونے چاہئیں۔ اسی کلچر سے ملک کو نقصان ہوا ہے۔

مزید : کامرس