”اوبامہ امریکہ کی امید ہے،اسے ووٹ ڈو“میڈونا کی اپیل

”اوبامہ امریکہ کی امید ہے،اسے ووٹ ڈو“میڈونا کی اپیل

واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) مقبول پاپ سنگر میڈونا نے یہاں گزشتہ شب اپنے ہزاروں مداحین سے کھچا کھچ بھرے آڈیٹوریم میں گیت سناتے ہوئے درمیانی وقفے میں صدر بارک اوباما کے بارے میں اپنے ریمارکس سے عوامی اور سیاسی حلقوں میں تہلکہ مچا دیا۔ دنیا بھر میں کروڑوں پرستاروں کے دل میں بسنے والی میڈونا خود بارک اوباما کی بڑی پرستار ہے اور اس کی بیوی مشعل کو بہت پسند کرتی ہے۔ میڈونا نے اپنے مداحوں سے پرزور اپیل کی کہ وہ آئندہ صدارتی انتخابات بارک اوباما کو صدر منتخب کرنے کیلئے اس کے حامی الیکٹورل کالج کے ارکان کو کامیاب کرائیں۔

54 سالہ پاپ سنگر نے اوباما کیلئے ووٹ مانگتے ہوئے انہیں امریکہ کے لیے امید کا نشان قرار دیا۔ یہاں تک بات درست تھی لیکن اس کے ان ریمارکس نے سب کو چونکا دیا کہ ”یہ بات اچھی ہے یا بری لیکن اس وقت وائٹ ہاﺅس میں ایک سیاہ فام مسلمان موجود ہے“۔ میڈونا نے اوباما کی بیوی مشعل کی بھی تعریف کی اور بتایا کہ وہ اسے کسی حد تک پسند کرتی ہے۔

میڈونا کو چونکا دینے والی حرکتیں کرنے کی عادت ہے۔ چند ماہ قبل اس نے ایک کنسرٹ میں جوش و خروش کے عروج پر اپنی شرٹ چاک کرکے مداحین کو اپنے جسم پر اوباما کا کند کیا ہوا نام دکھایا تھا لیکن گزشتہ شب اس نے اوباما کو ”سیاہ فام مسلمان“ قرار دے کر دارالحکومت میںایک عجیب و غریب صورتحال پیدا کردی۔ مقامی پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے علاوہ سیاسی حلقوں میں قیاس آرائیاں ہورہی ہیں کہ پہلے سے اوبامہ کے مسلمان ہونے کی جو افواہیں گردش کررہی ہیں اس حوالے سے میڈونا نے طنز کی ہے، شرارت کی ہے یا اس کے پاس واقعی کوئی ایسی اطلاع ہے جس بناءپر وہ اسے مسلمان سمجھتی ہے۔

مزید : صفحہ اول


loading...