پرائمری اور مڈل سکولون کو تعلیمی سہولیات فراہم کرنے کیلئے 4ارب روپے خرچ کئے جائینگے:مجتبیٰ شجاع

پرائمری اور مڈل سکولون کو تعلیمی سہولیات فراہم کرنے کیلئے 4ارب روپے خرچ کئے ...

لاہور (جنرل رپورٹر) وزیرتعلیم میاں مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا ہے کہ حکومت طلبہ کو جدید تعلیم دینے کے لیے جامع حکمت عملی پر عمل پیرا ہے اور صوبہ پنجاب میں نصاب اتھارٹی قائم کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پرائمری اور مڈل سکولوں میں تعلیمی سہولیات مہیا کرنے پر 4 ارب روپے خرچ اور 52 کروڑ روپے سے طالبات کے مڈل سکولوں کو اپ گریڈ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری سکولوں کا معیار بہتر ہوا ہے اور صرف لاہور میں 80 ہزار بچے سرکاری سکولوںمیںپرائیویٹ سکولوں سے داخل ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 10 ارب روپے کے انڈومنٹ فنڈ کے ذریعے ہزاروں طلبا وطالبات کو بیرون ملک اور اندرون ملک اعلیٰ تعلیم کے حصول کیلئے سکالر شپ فراہم کئے جارہے ہیں۔ ضلع باغ آزاد کشمیر سے آئے ہوئے صحافیوں کے وفد کو پنجاب میں تعلیم کے شعبہ میں کئے جانے والے اقدامات سے آگاہ کرتے ہوئے میاں مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا کہ حکومت نے پرائمری انرولمنٹ مہم صوبے میں 100 فیصد لٹریسی ریٹ حاصل کرنے کے لئے شروع کی اور حکومت میں 2015ءتک 88 فیصد خواندگی کے تناسب کو حاصل کرنے کے لیے تعلیم کے میدان میں ہر ممکن اقدامات کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت غریب اور مستحق طلبا وطالبات کو مفت تعلیم مہیا کرنے کے لیے ساڑھے 6 ارب روپے مہیا کیے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ میں ایک لاکھ آٹھ ہزار سکول ہیں اور صوبہ میں 31 بچوں کے لئے ایک استاد موجود ہے جبکہ نئی بھرتی کے بعد ایک استاد 29 بچوں کے لئے موجود ہوگا۔ میاں مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا کہ پنجاب ایجوکیشن انڈومنٹ فنڈ سے رواں سال 40 ہزار طلبہ کو وظائف دئیے جارہے ہیں۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ ہزاروں سکولوں میں کمپیوٹر کی تعلیم کیلئے جدید لیبز کا قیام سینکڑون سکولوں کے ایکسیلینس بنانے، 10 ہزار سکولوں میں ضروری سہولیات فراہمی، دانش سکولوں کا قیام اور اڑھائی ہزار سکولوں کو انگلش سکولوں کا درجہ دیا گیا ہے۔ وفد نے پی ایم ایل (این)کے سید نصیب اللہ گردیزی کے ہمراہ صوبائی وزیر سے ان کے دفتر میں ملاقات کی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1