تین روزگزرگئے،جنرل ہسپتال کے خراب ٹیوب ویل ٹھیک نہ ہوسکے

تین روزگزرگئے،جنرل ہسپتال کے خراب ٹیوب ویل ٹھیک نہ ہوسکے

لاہور (جنرل رپورٹر) جنرل ہسپتال میں تین دن سے خراب ٹیوب ویلوں کو ٹھیک نہ کیا جاسکا۔ پانی کی شدید کمی ہسپتال انتظامیہ سمیت مریضوں کی بڑی تعداد پانی کی عدم دستیابی سے پریشان۔ اس سلسلے میں پانی کی بحالی کے لئے قائم کی گئی 3 رکنی انکوائری کمیٹی بھی پانی کی بحالی میں ناکام ہوگئی۔ تفصیلات کے مطابق شہر لاہور کے مرکزی ہسپتال میں تاحال پانی کا مسئلہ حل نہ ہوسکا۔ ڈاکٹرز حضرات نے آپریشن معطل کررکھے ہیں جبکہ وارڈز اور ہوسٹل میں پانی کی عدم دستیابی سے لوگوں کو شدید دشواری کا سامنا ہے۔ دوسری طرف اس مسئلے کی جڑ تک جانے کیلئے 3رکنی کمیٹی کو تشکیل دیا گیا تھا جو پانی کی بحالی سمیت حقائق سامنے لانے میں ناکام ثابت ہوئی۔ گزشتہ روز خواجہ سلمان رفیق نے جنرل ہسپتال کا دورہ کیا تھا اور واسا کے ذریعے پانی کی عارضی ترسیل کو یقینی بنانے کی ہدایت دی تھی۔ جس پر مناسب اقدامات نہ کئے گئے۔ واٹر ٹینکر کے ذریعے پانی کی ناکام کوشش کی گئی جو موثر ثابت نہ ہوئی۔ تفصیلات کے مطابق جنرل ہسپتال میں 2 ٹیوب ویلز کام کررہے تھے 1 ٹیوب ویل گزشتہ ماہ خراب ہوگیا، اسے ویسے چھوڑ دیا گیا جبکہ 3 دن پہلے دوسرا ٹیوب ویل بھی خراب ہوگیا اور ہسپتال میں پانی کی کمی ایک بحران بن گیا۔ پانی کی عدم دستیابی کی وجہ سے گزشتہ تین دنوں میں آپریشن معطل کردئیے گئے ہیں جبکہ وارڈ اور ہوسٹل بند ہوچکے ہیں۔ خواجہ سلمان رفیق نے واسا سے خدمات حاصل کرلی ہیں اور ہدایت کی ہے کہ و اسا ہسپتال انتظامیہ سے پورا تعاون کرے اور واسا ٹیوب ویل ٹھیک نہ ہونے تک پانی کی فراہمی کو یقینی بنائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1