قرار دادوں پر عملدرآمد نہ ہونے کیخلاف بلوچستان اسمبلی میں ایک اور قرار داد منظور

قرار دادوں پر عملدرآمد نہ ہونے کیخلاف بلوچستان اسمبلی میں ایک اور قرار داد ...
قرار دادوں پر عملدرآمد نہ ہونے کیخلاف بلوچستان اسمبلی میں ایک اور قرار داد منظور

  


کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک)بلو چستان اسمبلی نے اپنی منظور شدہ قراردادوں پر عملدرآمد کے لئے ایک اور قرارداد منظورکرلی جبکہ اسمبلی کے ارکان نے پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم افضل چن کی جانب سے بلوچستان اسمبلی کے بارے میں سامنے آنے والے بیان پرشدید ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ بلو چستان اسمبلی میں سپیکر محمد اسلم بھوتانی کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں صوبائی وزیر میر حبیب الرحمان محمد حسنی نے قرارداد پیش کی جس میں مطالبہ کیا گیا کہ بلوچستان اسمبلی کی منظور شدہ قراردادوں پر عملدرآمد نہیں ہوا جس کی وجہ سے صوبے کے پارلیمانی نمائندوں میں تشویش پائی جاتی ہے قرارداد کو بحث کے بعد منظور کرلیا گیا۔اجلاس میں انسانی اعضاءکی پیوندکاری سے متعلق مسودہ قانون بھی منظورکرلیا گیا ۔اجلاس میں پیپلزپارٹی کے رہنماءندیم افضل چن کی جانب سے بلوچستان اسمبلی اور اس کے اراکین کے بارے میں سامنے آنے والے بیان پر شدید ردعمل کا اظہار کیا گیا اور اراکین اسمبلی نے کہا کہ اس بیان سے اسمبلی اراکین کا استحقاق مجروح ہوا ہے جس پر سپیکر محمد اسلم بھوتانی نے رولنگ دی کہ پارلیمانی امور اور اطلاعات کے صوبائی وزراءفوری طور پر ندیم افضل چن سے وضاحت مانگیں اور اگر انہوں نے اپنے الفاظ واپس نہ لیے تو اسمبلی مذمتی قرارداد منظور کرے گی۔رکن اسمبلی شیخ جعفر خان مندوخیل نے اجلاس میں صوبائی وزراءاور اراکین کی عدم موجودگی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر یہ سلسلہ جاری رہا تو وہ عدالت سے رجوع کرنے پر مجبور ہوں گے۔ 

مزید : کوئٹہ