آسٹریلوی بھیڑوں کی تلفی روکنے کے حکم میں توسیع

آسٹریلوی بھیڑوں کی تلفی روکنے کے حکم میں توسیع
آسٹریلوی بھیڑوں کی تلفی روکنے کے حکم میں توسیع

  


 کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)سندھ ہائیکورٹ کے دو رکنی بنچ نے 22000 آسٹریلین بھیڑیں تلف کے خلاف حکم امتناع میں جمعہ تک ملتوی کردی ہے۔ سماعت کے دوران بھیڑوں کے درآمد کندہ کے وکیل عدنان میمن نے آسٹریلیا میں تعینات پاکستانی ہائی کمشنر کا ایک خط پڑھ کرسنایا۔ اس خط کے مطابق ان بھیڑوں کو منہ سے پانی رسنے کی بیماری کے باعث بحرین میں اتارنے سے روک دیا گیا تھا اور ان کے خون کے نمونوں کے تجزئے کے بعد صحت مند بھیڑوں کو جہاز سے اتارنے کی اجازت دیدی گئی تھی لیکن اس دوران جہاز کے برتھ پر کھڑے رہنے کی مدت ختم ہوگئی اور اسے برتھ چھوڑنے کا حکم دے دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد کی لیبارٹری نے ان بھیڑوں کو صحت مند قرار دیا لیکن سندھ کی دو پولٹری لیبارٹریوں نے بھیڑوں کے بیمار ہونے کی رپور ٹ دی حالانکہ یہ لیبارٹریاں بین الاقوامی طور پر تسلیم شدہ نہیں ہیں۔ ان کی رپورٹ کی بنیاد پر حکومت نے بھیڑوں کو تلف کرنا شروع کردیا۔ عدالت کی طرف سے قائم کیے گئے میڈ یکل بوڑد نے اپنی رپورٹ پیش کردی جس میں کہا گیا تھا کہ بھیڑوں میں اینتھریکس کی بیماری کے شواہد نہیں ملے۔ کیس کی آئندہ سماعت کل ہو گی۔

مزید : کراچی