جہاز کے بغیر 30فٹ کی بلندی پراڑیں

جہاز کے بغیر 30فٹ کی بلندی پراڑیں
جہاز کے بغیر 30فٹ کی بلندی پراڑیں

  


 لندن(بیورورپورٹ) جرمنی میں چائنیز نژاد کینیڈین شہری رے مونڈ نے ایک ایسا جیٹ پیک ایجاد کیا ہے جسے انسان کمر پر باندھ کر دریاﺅ ں ‘ اور سمندر کے اوپر ہوا میں اڑ کر سفر کر سکتا ہے ، برطانیہ کے ایک معروف صنعتکار جرمی بکٹس 1لاکھ پندرہ ہزار پاﺅنڈ کا چیٹ پیک خرید کر دریائے تھیم اور سمندر پر اڑنے کا مظاہرہ کیا ۔جیٹ پیک باندھ کر انسان پانی کی سطح سے تیس فٹ اوپر بلندی تک جا سکتا ہے جبکہ اس کی رفتار 25میل فی گھنٹہ ہے 80میل سفر کے بعد اس مشین کو پیٹرول سے ری فل کیا جا سکتا ہے اور یہ مسلسل دو سے تین گھنٹے تک پرواز کرا سکتی ہے اس میں پانی کا پریشر اور دباﺅ بنا کر اسے پاور کے ساتھ خارج کر کے اوپر اٹھا جاتا ہے اسے دائیں بائیں موڑنا پانی پر لینڈ کرنا انتہائی آسان ہے اور یہ دو میٹر قد والے پائلٹ اور 150کلو گرام وزن اٹھانے کی صلاحیت رکھتا ہے اس کا ایک پائپ ہر وقت پانی میں رہتا ہے جہاں سے پانی جیٹ پیک میں داخل ہو کر پوری طاقت کے ساتھ مشین سے خارج ہوتا ہے اور اسے اڑانے والا تیس فٹ بلندی اور پچیس میل فی گھنٹہ کی رفتار سے سفر کر سکتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس