طلباءپر تشدد ،پنجاب یونیورسٹی کے وی سی ودیگر پر مقدمہ درج کرنے کا حکم

طلباءپر تشدد ،پنجاب یونیورسٹی کے وی سی ودیگر پر مقدمہ درج کرنے کا حکم

  



لاہور (ایجوکیشن رپورٹر) طلباءپر تشدد عدالت نے پنجاب یونیورسٹی کے وائس چانسلر مجاہد کامران، رجسٹرارامین اطہر، ریذیڈینٹ آفیسر احسان شریف اور دو سیکورٹی گارڈ ز طیب ، شہباز پر مقدمہ درج کرنے کا حکم جاری کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب یونیورسٹی کا طلباءپر چند روز پہلے وائس چانسلر مجاہد کامران، رجسٹرارامین اطہر، ریذیڈینٹ آفیسر احسان شریف کی سر پرستی میں مسلح سیکیورٹی گارڈز نے طلباءکو تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔ اساتذہ نے طلباءکو گالی گلوچ کیا اور انہیں تھپڑ مارتے رہے۔ وحشیانہ تشدد کے نتیجہ میں چار طالب علم شدید زخمی ہو گئے تھے ایک طالب علم کا بازو بھی فریکچر ہو چکا ہے۔ اسلامی جمعیت طلبہ پنجاب یونیورسٹی کے ترجمان نے بتایا کہ زخمی طالب علموں نے قانونی راستہ اختیار کرتے ہوئے پولیس کو درخواست دی اور ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا۔ مگر پنجاب پولیس نے یونیورسٹی انتظامیہ کے ساتھ ملی بھگت سے مقدمہ در ج کرنے کے حوالے سے ٹال مٹول سے کام لینا شروع کر دیا۔ اور طلبہ کی درخواست پر کوئی کاروائی عمل میں نہ لائی گئی۔

۔ پولیس کے اس نا مناسب رویے پر طلباءنے عدالت سے رجوع کیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4