محکمہ تعلیم کی ناقص حکمت عملی صوبائی دارالحکومت میں غیر رجسٹر ڈ سکولوں کی بھرمار

محکمہ تعلیم کی ناقص حکمت عملی صوبائی دارالحکومت میں غیر رجسٹر ڈ سکولوں کی ...

  



                                                  لاہور(ذکاءاللہ ملک)محکمہ ایجوکیشن کی ناقص حکمت عملی اور عدم توجہی کے باعث صوبائی دارالحکومت میں غیر رجسٹرڈ سکولوں کی بھر مار ہو گئی ،گلی محلوں میں واقع غیر تسلی بخش تعلیمی ماحول ،متفرق اخراجات کے نام پر بڑھتی ہوئی فیسوں اور تعلیمی سہولیات سے عاری سکولوں کے خلاف محکمانہ کاروئی صرف فائلوں کی حد تک محدود ہو کر رہ گئی ذرائع کا کہنا ہے کہ محکمہ تعلیم میں نجی سکولوں کی رجسٹریشن کے حوالے سے سیاسی اثرورسوخ اور کرپشن کو قوائدو ضوابط سے زیادہ ترجیح دی جاتی ہے اوربات سامنے آنے پر نام نہاد انکوئریاںو کمیٹیاں تشکیل دے دی جاتی ہیں ۔تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت میں ہزاروں کی تعداد میں ایسے نجی غیر رجسٹرڈ سکول ہیں جہاں لیبز،گراﺅنڈ،صاف ستھرے واش رومز،کشادہ کلاس رومز،پینے کے صاف پانی سمیت دیگر بنیادی تعلیمی سہولیات کا فقدان پایا جاتا ہے جبکہ 90فیصد نجی سکولوں کی عمارتوں میں سیکیورٹی سمیت آگ لگنے کی صورت میں کوئی حفاظتی اقدامات نہیںہیںرجسٹرڈ شدہ تعلیمی اداروں میں بھی مذکورہ تعلیمی سہولیات و اقدامات کا بھی کوئی وجود نہیں ہے مگر محکمے اور دفاتر میں ان سکولوں کی فائلیں بھرپور تعلیمی سہولیات سے بھری پڑی ہیںاطلاعات کے مطابق لاہور شہر میں قوائد و ضوابط کے برعکس 6ہزار سے زائد سکول ہیں جو بچوں کو علم کی دولت سے آراستہ کرنے کے نام پر اپنے کاروبار چمکا رہے ہیں صوبائی دارالحکومت میں سرکاری سکولوں کی کم ہوتی تعداد جبکہ محکمہ تعلیم اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی ناک تلے صوبائی دارلحکومت میں نان رجسٹرڈ سکولوں کی بڑھتی ہوئی تعداد مذکورہ محکموں کی ناقص کار کردگی کا منہ بولت ثبوت ہیں، تعلیم کے بلندو بالا دعوے نجی غیر رجسٹرڈ سکولوں میں غیر تسلی بخش تعلیمی ماحول و سہولیات کے سامنے دم توڑ دیتے ہیں جبکہ حکومتی دباﺅ کے تحت ایسے تعلیمی اداروں کے خلاف کریک ڈاﺅن صرف فائلوں کی حد تک کیا جاتا ہے،رابطہ کرنے پر ایگزیکٹیو ڈسٹرکٹ آفسیر (ایجوکیشن) پرویز اختر خان کا کہنا تھا کہ رجسٹرڈ شدہ تعلیمی اداروں میں چیکنگ اور مانیٹرنگ کے لئے تمام ڈی اوز کو انسپکشن ٹاسک دیا جا چکا ہے،غیر تسلی بخش تعلیمی سہولیات کے باعث سکولوں کی رجسٹریشن منسوخ کر دی جاتی ہے جبکہ غیر رجسٹرڈ سکولوں کے خلاف محکمانہ کاروائی کا عمل جاری ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1