گنگارام ہسپتال سے نومولودکو اغوا کر نےوالی خاتون کا سراغ نہ مل سکا

گنگارام ہسپتال سے نومولودکو اغوا کر نےوالی خاتون کا سراغ نہ مل سکا

  



لاہور(کرائم سیل)سول لائن کے علاقہ گنگارام ہسپتال کی گائنی وارڈ سے نومولودکو اغوا کر نے والی خاتون کا تاحال کوئی سراغ نہ مل سکا مقد مہ درج کر تے ہو ئے کا، بتا یا گیا ہے کہ جوہر ٹاون کا رہائشی محنت کش محمد رفیق گز شتہ روز اپنی بیوی کو ڈلیوری کے سلسلہ میں اپنی بیوی کو لے کر گنگارام کی گائنی وارڈ میں لایا جہاں اس کے گھردوپہر 11 بجے کے قریب بیٹے کی ولادت ہوئی اوراس کی بیوی اور بچے کو وارڈ میں شفٹ کر دیا گیا ہے تھوڑی دیر کے بعد جب بچے کی خالہ اس کو دیکھنے کے لیے وارڈ میں گئی تو بچے کو اس کی ماں کے پاس نہ پا کر اس نے ڈاکٹر سے پوچھا کہ بچہ کہاں ہے تو انہوں نے بتایا کہ ایک عورت جو کہ خود کو بچے کی پھوپھی بتا رہی تھی ابھی تھوڑی دیر پہلے ہی بچے کو لے کر باہر گئی ہے اس پر جب بچے کے والد اور باقی اہلخانہ سے پوچھا گیا تو انہوں نے بتایا کے وہ لوگ تو اندر گئے ہی نہیں بچے کے والد کے مطابق اس کا بیٹا ہسپتال کے عملے کی ملی بھگت سے غائب کیا گیا ہے اورنامعلوم عورت بچے کو اغوا کر کے فرار ہو گئی ہے ،دوسری جانب گنگارام انتظامیہ کا کہنا ہے کہ واقعہ کی انکوائری کی جا رہی ہے ہسپتال میں نصب سی سی ٹی وی کیمروں کی مدد سے چیک کیا جا رہا ہے کہ وہ عورت کون تھی اور بچے کو اغوا کر کے کہاں غائب ہو گئی پو لیس کے مطابق نامعلوم خاتون کی تلاش کے لئے ہسپتال کی سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کر لی گئی ہے جس کی مدد سے نامعلوم عورت کو جلد تلاش کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ۔

مزید : علاقائی


loading...