ہنجر وال ،ڈاکٹروں کی غفلت نے حاملہ خاتون اور اس کے بچے کی جان لے لی

ہنجر وال ،ڈاکٹروں کی غفلت نے حاملہ خاتون اور اس کے بچے کی جان لے لی

  



                           لاہور(کرائم سیل)ہنجر وال میں نجی کلینک کے ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت نے تیس سالہ حاملہ خاتون اور اس کے ہونے والے بچے کی جان لے لی ، ورثاءنے لاش ملتان روڈ پر رکھ کر شدید احتجا ج کیا جس سے ٹریفک کی لمبی قطاریں لگ گئیں ۔بتایاگیا ہے کہ ہنجر وال کے ایک نجی میٹرنٹی کلینک میں رات گئے (س) نامی خاتون کو ڈلیوری کیس کے سلسلے میں داخل کروایا گیا جہاں غلط انجکشن لگنے کے باعث حاملہ خاتون(س) کی حالت خراب ہونا شروع ہو گئی، کوئی بھی ڈاکٹر ڈیوٹی پر موجود نہ ہونے کی وجہ سے خاتون کو فوری طور پر جناح ہسپتال لیجانے کی کوشش کی گئی مگر خاتون راستے میں ہی دم توڑ گئی جس پر ورثاءنے نجی کلینک کے خلاف احتجاج شروع کر دیا، پہلے تو لاش کو ملتان روڈ پر رکھا گیا،بعد میں پولیس کی مداخلت پر لاش کو کلینک کے سامنے لے گئے اور سڑک بلاک کر کے احتجاج شروع کر دیا جس پر پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی اور ڈیوٹی پر موجودڈاکٹر کو حراست میں لے لیا گیا ۔ پولیس کے مطابق تاحال ورثاءکی جانب سے کوئی درخواست موصول نہیں ہوئی جس کی وجہ سے کوئی کارروائی آگے نہیں بڑھائی جا سکی جیسے ہی درخواست موصول ہو گی تو کارروائی کو مزید آگے بڑھا یا جائے گا۔خاتون تین بچوں کی ماں بتائی جاتی ہے جن کی ڈلیوری بھی اسی ہسپتال میں ہوئی۔

مزید : علاقائی


loading...