زندگی بھر کی جمع پونجھی چوری ہونے کے بعد دیہاتی کارروائی کے لیے تھانہ شمالی چھاﺅنی کے چکر کاٹنے پر مجبور

زندگی بھر کی جمع پونجھی چوری ہونے کے بعد دیہاتی کارروائی کے لیے تھانہ شمالی ...

  



                                   لاہور(کرائم سیل)زندگی بھر کی جمع پونجھی چوری ہو جانے کے بعد دیہاتی کارروائی کے لیے تھانہ شمالی چھاونی کے چکر کاٹنے پر مجبور ہو گئے۔پولیس اہلکار جان بوجھ کر لیت و لعل سے کام لے رہے ہیں متاثرہ افراد کا الزام۔تفصیلات کے مطابق محمد شریف ،محمد بشیر اور محمدمشتاق لال کرتی کے رہائشی ہیں اور وہاں کاشتکاری اور مویشی پال کر گزربسر کرتے ہیں نمائندہ "پاکستان" سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ 1س8ستمبر کی رات کو ان کے گھر کے باہر سے چار خواتین اور دو مردوں پر مشتمل چوروں کی ٹولی نے ان کی گائے اور دیگر قیمتی سامان چوری کر لیا جس کی کل مالیت 4لاکھ کے قریب ہے اس معاملے میں ہم نے ایک درخواست نمبر 1228-SB-IVE تھانہ شمالی چھاونی میں درج کروائی اور پولیس اہلکاروں نے بلوچ ہسپتال کے سی سی ٹی وی کیمروں کے ذریعے چوروں کی نشاندہی بھی کر لی ہے لیکن اس کے باوجود ابھی تک کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی جا رہی اور ہر روز ہمیں تھانہ میں بلا کر کئی گھنٹے تک انتظار کروا کر مختلف حیلے بہانے کر کے پولیس اہلکار اگلے دن آنے کا کہ دیتے ہیں پولیس حکام سے اپیل ہے کہ اس معاملے کی تفتیش کی جائے اور ہمیں انصاف کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔اس معاملے میں تھانہ شمالی چھاونی میں رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ معاملے کی تفتیش ہو رہی ہے بہت جلد مجرموں کو گرفتار کر لیا جائے گا۔

مزید : علاقائی


loading...