دریائے راوی سے 9سالہ طالب علم کی مسخ شدہ نعش برآمد

دریائے راوی سے 9سالہ طالب علم کی مسخ شدہ نعش برآمد

  



لاہور(کرائم سیل)دریائے راوی سے گزشتہ روز صبح 6بجے 9سالہ طالب علم کی مسخ شدہ نعش برآمد ،پولیس نے مقامی افراد کی اطلاع پر فوری موقع پر پہنچ کر کارروائی کرتے ہوئے نعش کو پوسٹ مارٹم کے لیے میو ہسپتال کے ڈیڈ ہاوس میں منتقل کر دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز صبح 6بجے دریائے راوی میں واقع بارا دری سے مقامی افراد کو ایک 9سالہ طالب علم کی نعش ملی جسے نداخلاقی کے بعد قتل کر دیا گیا تھا۔پولیس نے فوری موقع پر پہنچ کر کارروائی کرتے ہوئے مقتول کی نعش کو قبضے میں لے لیا اور جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کر کے نعش کو پوسٹ مارٹم کے لیے مردہ خانہ میں جمع کروا دیا ہے پولیس کے مطابق نعش دو روز پرانی ہے اور طالب علم کی پہچان محمد خبیب کے نام سے کر لی گئی ہے لیکن اس کی رہائش کے حوالے سے ورثا کی تلاش کی جا رہی ہے۔جلد ہی ان کا پتہ چل جائے گا اس کے علاوہ ابتدائی رپورٹ کے مطابق طالب علم کو بد اخلاقی کے بعد گلے میں پھندا ڈال کر قتل کیا گیا ہے لیکن اس معاملے میں اصل حقائق پوسٹ مارٹم رپورٹ سامنے آنے پر ہی پتہ چلیں گے۔

مزید : علاقائی