پنجاب کے مختلف علاقوں میں چار لڑکیاں زیادتی کا نشانہ بن گئیں

پنجاب کے مختلف علاقوں میں چار لڑکیاں زیادتی کا نشانہ بن گئیں
پنجاب کے مختلف علاقوں میں چار لڑکیاں زیادتی کا نشانہ بن گئیں

  



لاہور،فیصل آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )صوبائی دارلحکومت کے مختلف علاقوں میں 3 اور واربرٹن میں ایک لڑکی سے اجتماعی زیادتی کا واقعہ پیش آیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق اچھرہ رشید پارک کے رہائشی سلطان احمد کی 12سالہ بیٹی (ص) گھر سے سبزی لینے بازار گئی جہاں سے محلے کے اوباش نوجوانوں ارشد، محسن اور اشتیاق نے اپنے ایک نامعلوم دوست کے ساتھ مل کر اسے اغواءکر کے بعد اشتیاق کے ڈیرے پر لے جاکر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔علاوہ ازیں بادامی باغ پھاٹک نمبر 5کچی آبادی کی رہائشی حفیظاں بی بی کی 13سالہ بیٹی (م) کو اس کے محلے دار عابد نے اپنے ایک دوست کے ساتھ مل کر زیادتی کا نشانہ بنا دیا ۔جنوبی چھاﺅنی میں محلے دار منیر نے گھر میں گھس کر (ر) کو گن پوائنٹ پر زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔ پولیس نے مقدمات درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے تاہم وہ تاحال کسی بھی ملزم کو گرفتار نہیں کر سکی ۔ علاوہ ازیں فیصل آباد میں مرید والا کے علاقے 211 گ۔ب میں علی رضا نے ساتھی کی مدد سے بیوہ خاتون کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ لاہور کی یاسمین بی بی اوکاڑہ کے نواحی قصبہ موضع تاتار میں واقع دربار بابا سوبے شاہ پر سلام کرنے کی غرض سے گئی جہاں ملزمان ارشاد، سرفراز، جاوید وغیرہ پانچ افراد اسلحہ کے زور پر اغوا کرکے قریبی کھیتوں میں لے گئے اور ملزم ارشاد نے اسے جان سے مار دینے کی دھمکی دیتے ہوئے زبردستی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔دریں اثناءنواحی آبادی جھگیاں کھوکھراں کے ڈاکٹر کھوکھر کی بیٹی آمنہ بی بی نے تھانہ واربرٹن میں بتایا اسے گذشتہ ماہ16اگست کو مسمیان ثقلین، محمود وقاص اور دیوان شاہ نے گن پوائنٹ پر اغوا کر کے ٹھوکر نیاز بیگ میں ایک مکان میں لے گئے جہاں پر ایک اور ملزم قاسم پہلے سے موجود تھا۔ ملزمان بار باری اس سے مبینہ طور پر ایک ماہ تک زیادتی کر تے رہے اور گھر کی مالکہ سحر نسیم ساتھی عورت اعجاز بی بی کے ساتھ نگرانی کر تی تھیں۔ وہ گذشتہ روز موقع پا کر وہاں سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئی۔ واربرٹن پولیس نے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر کے تلاش شروع کر دی ہے۔

مزید : جرم و انصاف