مقناطیسی سیاہی کا استعمال قانونی تقاضا نہیں تھا، عام انتخابات 2013 ءکا حقائق نامہ تیار

مقناطیسی سیاہی کا استعمال قانونی تقاضا نہیں تھا، عام انتخابات 2013 ءکا حقائق ...
مقناطیسی سیاہی کا استعمال قانونی تقاضا نہیں تھا، عام انتخابات 2013 ءکا حقائق نامہ تیار

  



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے عام انتخابات 2013ءکا حقائق نامہ تیار کر لیا ہے جو 29 ستمبر کو انتخابی اصلاحات کمیٹی کے اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق حقائق نامے میں انتخابات سے متعلق لگائے جانے والے تمام الزامات کے جواب دیئے گئے ہیں اور کہا گیا ہے کہ مقناطیسی سیاہی کا استعمال قانونی تقاضا نہیں تھا۔ حقائق نامے میں کہا گیا ہے کہ بیلٹ پیپر کی چھپائی کیلئے صرف 21 دن کا وقت تھا، امیدواروں کی تعداد زیادہ اور چھپائی کیلئے افرادی قوت کم تھی جبکہ پرانی مشینوں کی وجہ سے بیلٹ پیپرز کی چھپائی میں تاخیر ہوئی۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے حقائق نامہ میں مزید کہا گیا ہے کہ امیدواروں کی جانچ آر اوز کا کام تھا اور الیکشن کمیشن کا اس سے تعلق نہیں جبکہ بیلٹ پیپرز کے اجراءکے بعد ووٹرز کی اہلیت کو چیلنج نہیں کیا جا سکتا۔

مزید : قومی /اہم خبریں


loading...