کٹر یہودیوں نے فضائی مسافروں کی زندگی اجیرن کردی

کٹر یہودیوں نے فضائی مسافروں کی زندگی اجیرن کردی
کٹر یہودیوں نے فضائی مسافروں کی زندگی اجیرن کردی

  



نیویارک (نیوز ڈیسک) امریکہ سے اسرائیل جانے والی ایک پرواز کو سینکڑوں کٹر یہودیوں نے ہرغمال بنالیا اور اپنی مرضی سے مسافروں کو مختلف سیٹوں پر بیٹھنے کے احکامات جاری کرتے رہے۔ یہ پرواز نیویارک کے جان دیف کینڈی ایئرپورٹ سے روانگی کیلئے تیاری کررہی تھی کہ یہودیت کے ہریدی فرقے سے تعلق رکھنے والے یہ لوگ اچانک جہاز میں کھڑے ہوگئے اور سب مسافروں کو حکم دیا کہ وہ اپنی سیٹیں تبدیل کریں کیونکہ وہ چاہتے ہیں کہ سب عورتیں ایک طرف اور مرد دوسری طرف ہوجائیں۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ خواتین کے ساتھ بیٹھنا پسند نہیں کرتے۔ جب تک ان کے احکامات تسلیم نہیں کئے گئے یہ سیٹوں کے درمیانی راستے میں کھڑے رہے اور پرواز کو اڑنے کی اجازت نہ دی۔ بالآخر سب مسافروں کو مجبور ہوکر ان کی بات ماننا پڑی۔ یہ یہودی خود کو خالص ترین فرقہ سمجھتے ہیں اور یہودی مذہب کے سال نو کے آغاز پر اسرائیل جارہے تھے۔ ضدی یہودیوں کی خواہش پوری ہونے پر اسرائیل ایئرلائن کی پرواز بالآخر منزل کی طرف روانہ ہوگئی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...