انٹرنیٹ پر ٹانگ بیچنے کی کوشش ناکام

انٹرنیٹ پر ٹانگ بیچنے کی کوشش ناکام
انٹرنیٹ پر ٹانگ بیچنے کی کوشش ناکام

  



ایمسٹرڈیم(نیوز ڈیسک) ہالینڈ میںایک شخص نے اپنی کٹی ہوئی ٹانگ کو لیمپ میں تبدیل کر کے بیچنے کی کوشش شروع کر دی ہے۔تریپن سالہ لیو بونٹین کی ٹانگ کی ہڈی دو سال قبل ایک حادثے میں کئی جگہ سے ٹوٹ گئی تھی اور اس سال جون میں اس میں شدید انفیکشن ہو جانے کی وجہ سے اسے کاٹ دیا گیا۔

اگرچہ اسپتال کا یہ اصول ہے کہ کٹے ہوئے اعضاءمریضوں کو نہیں دیے جاتے لیکن لیو نے ٹانگ کو اپنی ملکیت قرار دے کر حاصل کر لیا اور پھر ایک ماہر کی مدد سے اسے محفوظ کر کے اور کچھ مزید تبدیلیاں کروا کر ایک لیمپ میں تبدیل کر دیا ۔

لیو نے کٹی ٹانگ کا لیمپ 80 لاکھ روپے میں ای ویب سائٹ پر فروخت کے لیے پیش کیا تھا لیکن ویب سائٹ نے انسانی اعضاءکی فروخت کے خلاف پالیسی کی وجہ سے اس کی اجازت نہیں دی اور اب وہ اسے دیگر ذرائع سے فروخت کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

اس کا کہنا ہے کہ وہ رقم حاصل کر کے مصنوعی ٹانگ خریدنا چاہتا ہے اور اپنے جیسے دیگر لوگوں کی مدد کے لیے ایک ادارہ قائم کرنا چاہتا ہے۔

مزید : تفریح