تحریک انصاف پارٹی فنڈنگ کی تحقیقات سے بھاگ رہی ہے،احسن اقبال

  تحریک انصاف پارٹی فنڈنگ کی تحقیقات سے بھاگ رہی ہے،احسن اقبال

  

اسلام آباد (این این آئی) مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنماء احسن اقبال نے کہا ہے کہ تحریک انصاف پارٹی فنڈنگ کی تحقیقات سے بھاگ رہی ہے،عمران خان قانون کی گرفت سے بچنے کیلئے قانون کی شگافیوں کے پیچھے چھپنے کی کوشش کر رہے ہیں،تحریک انصاف نے الیکشن کمیشن کے گوشواروں میں ان 18 اکاونٹس کا ذکر نہیں کیا جس سے خطیر رقم آتی ہے اور وہ اپنا اور پارٹی کے اخراجات چلاتے ہیں، عمران خان کو ڈر ہے الیکشن کمیشن میں شفاف ممبران کی تعیناتی ہوئی تو ان کی منی لانڈرنگ کا حساب ہوگا،آج تک انہوں نے الیکشن کمیشن ممبران کی تقرری کیلئے اپوزیشن لیڈر سے رابطہ نہیں کیا۔جمعرات کو الیکشن کمیشن کے باہر مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب کے ہمراہ میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا الیکشن کمیشن کے باہر سے پوری قوم کی توجہ منی لانڈرنگ کی طرف مبذول کرنا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ عمران خان ایک ہسپتال کو سیاسی مقاصد کیلئے استعمال کرتے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف نے الیکشن کمیشن کے گوشواروں میں 18 اکاونٹس کا ذکر نہیں کیا،سٹیٹ بینک نے ان 18 اکاونٹس کے بارے میں بتایا ہے کہ خطیررقم ان اکاونٹس میں آتی تھی،عمران خان ان 18 بے نامی اکاونٹس سے اپنے اور اور پارٹی کے اخراجات چلاتے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین نیب سے اس بارے میں تحقیقات کرنے کی درخواست کی ہے۔انہوں نے کہا کہ نام نہاد مسٹر کلین 5 سال سے اپنی منی لانڈرنگ چھپانے کی کوشش کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ عمران خان کسی قسم کا حساب پیش کرنے سے قاصر ہیں وہ کیوں اپنی مرضی کے الیکشن کمیشن ممبران کی تقرری کرنا چاہتے ہیں کیونکہ انہیں ڈر ہے کہ شفاف ممبران کی تعیناتی ہوئی تو ان کی منی لانڈرنگ کا حساب ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے آج تک الیکشن کمیشن ممبران کی تقرری کے لیے اپوزیشن لیڈر سے رابطہ نہیں کیا۔

احسن اقبال

مزید :

پشاورصفحہ آخر -