2قتل ‘ حادثات میں 10جاں بحق ‘ 1خود کشی لاش برآمد ‘ نشئی ہلاک 

    2قتل ‘ حادثات میں 10جاں بحق ‘ 1خود کشی لاش برآمد ‘ نشئی ہلاک 

  

ملتان ‘کبیروالا ‘ نواں شہر ‘ اڈا کوٹ بہادر ‘ مظفر گڑھ ‘ کوٹ چھٹہ ‘ جامپور ‘ بوریوالا ‘ بارہ میل ‘ رحیمار خان ‘ لیاقت پور ‘ ہارون آباد ( خبر نگار خصوصی ِ ، نمائندگان پاکستان ) 2قتل ‘حادثات میں 10جاں بحق ‘ 1خود کشی ، لاش برآمد ، نشئی ہلاک قطب پور کے(بقیہ نمبر42صفحہ12پر )

 علاقے میں سگے بھتیجے نے ہمشیرہ کا رشتہ ٹوٹنے کے رنج پر ستر سالہ چچا کو مکا مارکر قتل کردیا ہے۔جبکہ مزاحمت کرنے پر اپنے کزن اور اسکے بیٹے کو مضروب کیا ہے۔ملزم موقع سے فرار ہوگیا۔مقامی پولیس نے قانونی کارروائی کے بعد لاش پوسٹ کیلئے نشتر ہسپتال منتقل کردی ہے۔معلوم ہوا ہے تھانہ قطب پور کے علاقے بستی دائرہ کے رہائشی ستر سالہ خلیل نے بیٹے کی شادی اپنے بھائی جلیل کی بیٹی سے کی۔شادی کہ تقریبا چھ ماہ بعد گھریلو ناچاقی بڑھ گئی۔اور دونوں خاندان میں بات طلاق تک جاپہنچی۔اس بات کے رنج پر جلیل کا بیٹا عدنان بخاری گزشتہ روز طیش میں اپنے سگے چچا خلیل کے گھر آیا۔اور توں تکرار شروع کردی ہے۔اسی دوران عدنان نے غصہ میں آکر زور دار مکا مارا۔جو سگے چچا کے دل والی سائیڈ سینے پر لگا۔اور وہ موقع پر ہی دم توڑ گیا۔لڑائی جھگڑے کا شور سن کر متوفی کا بیٹا اور پوتا موقعہ پر پہنچ گئے۔جن کو بھی ملزم عدنان نے مضروب کیا اور فرار ہوگیا۔اطلاع ملنے پر پولیس تھانہ قطب پور جائے وقوعہ پر اگئی۔قانونی کارروائی کے بعد لاش نشتر ہسپتال پوسٹ مارٹم کیلئے منتقل کردی گئی ہے۔پولیس ذرائع کے مطابق مرنے والا شخص دل کے مرض میں مبتلا تھا۔ جبکہ ایکسیڈنٹ میں دو افراد جانبحق ورثاء نے روڈ بلاک کردیا تفصیل کے مطابق گزشتہ روز صبح سے بستی ملوک کے علاقے اڈا صادق والا پل احتجاج کے دوران موٹروے روڈ مکمل بلاک رہا احتجاج کرنے والوں کا موقف ہے کہ گزشتہ رات ٹرک کی ٹکر سے موٹر سائیکل سوار محمد مجاہد اور دانیال موقع پر فوت ہوگئے تھے جبکہ دو افراد شاہد اور جمیل جو کہ شدید زخمی ہوئے تھے پولیس فوت ہونے والے افراد کی لاشیں ورثا کو نا دے رہی ہے جبکہ پولیس کے مطابق زخمیوں اور لاشوں کو رات نشتر ہسپتال ملتان منتقل کیا گیا تھا ورثا لاشیں نشتر ہسپتال ملتان سے قانونی کارروائی کے بعد وصول کرسکتے ہیں ورثا باضد رہے کہ انہیں لاشیں یہی فراہم کی جائیں پولیس اور مظاہرین کے درمیان مذکرات کےبعدپولیس نےلاشیں ورثا کےحوالےکردیں اور روڈ کلیئر کروادیا گیا زرائع کے مطابق جانبحق ہونے والے دونوں افراد سے پسٹل برآمد ہوئے جوکہ ڈکیت بتائے جارہے ہیں پولیس کی جانب سے انویسٹی گیشن جاری ہے جلد حقائق منظر عام پہ آجائیں گے۔ کبیروالا ، نواں شہر ، اڈا کوٹ بہادر سے نامہ نگار، نمائندگان پاکستان کے مطابق سترہ سالہ موٹر سائیکل سوار نو جوان مرگی کا دورہ پڑ نے پر جاں بحق، موٹر سائیکل چلاتے دورہ پڑنے پرسڑک پر آن گرا، موقع پر خالق حقیقی سے جاملا، گزشتہ شام تقریباََ چھ بجے نواحی موضع فرید آبا د کے رہائشی حق نواز آسرسیال کا سترہ سالہ بیٹا حبیب الرحمن جو کہ مرگی کی مرض کے مرض میں مبتلا ءتھامو ٹر سائیکل پر سوار چوک نواں شہر سے ممدال جارہا تھا کہ راستے میں اچانک دورہ پڑنے سے موٹر سائیکل سمیت سڑک پر آن گرا ، سر پر شدید چوٹیں آنے کے باعث حبیب الرحمن موقع پر ہی خالق حقیقی سے جاملا ۔ دریں اثنا ٹریفک کا افسوسناک حادثہ،اوورٹیکنگ کرنے کے دوران کار سامنے سے آنیوالی تیزرفتار بس سے جاٹکرائی،نجی بینک کا منیجر جان بحق،بیٹا زخمی،حادثہ حاصل پور کے قریب پیش آیا،کار سوار بینک منیجر اپنے بیٹے کے ہمراہ اسکے دوست کے والد کی نمازجنازہ میں شرکت کےلئے چشتیاں جارہے تھے ،جان بحق منیجر کی نمازجنازہ آبائی علاقہ موضع ممدال کبیروالا میں ادا کی گئی ،نمازجنازہ میں ہزاروں افراد کی شرکت ،جنازہ اُٹھنے پر کہرام اور رقت آمیز مناظر ،مرحوم بینک منیجر ملک محسن خان تھہیم،سید گروپ کے مرکزی رہنما ملک طاہر خان تھہیم کے بڑے بھائی تھے ۔تفصیل کے مطابق تحصیل کبیروالا کے معروف زمیندار خاندان سے تعلق رکھنے والے اور میزان بینک راواں برانچ کے منیجر ملک محسن خان تھہیم ،اپنے میڈیکل کے طالب علم بیٹے ملک اجمل خان تھہیم کے ہمراہ اسکے کلاس فیلو محمد عثمان کے والد کی نمازجنازہ میں شرکت کےلئے کبیروالا سے چشتیاں جارہے تھے کہ حاصل پور سے آگے اور چشتیاں سے پہلے عنایتی کے علاقہ میں اوور ٹیکنگ کے دوران انکی کار سامنے سے آنے والی تیز رفتار بس سے جاٹکرائی،جس کے نتیجے میں بینک منیجر ملک محسن خان تھہیم شدید زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر جان بحق ہوجبکہ ان کے بیٹے ملک اجمل خان تھہیم شدید زخمی ہوگئے ۔مرحوم کے جان بحق ہونے کی اطلاع پہنچتے ہی موضع ممدال کے علاقہ کی فضا سوگوار ہوگئی اور ان کے گھر میں کہرام مچ گیا۔مرحوم کی نمازجنازہ ان کے آبائی علاقہ موضع ممدال کی قدیمی عیدگاہ میں ادا کی گئی۔جامعہ دارالعلوم عیدگاہ کبیروالا کے ناظم تعلیمات وممبر ڈویژنل امن کمیٹی مولانا مفتی حامد حسن نے نمازجنازہ پڑھائی۔نمازجنازہ میں سید گروپ کے مرکزی رہنما سید عابد امام،مفتی محمد اویس ارشاد،جامعہ سراج العلوم کبیروالا کے مہتمم مولانا عمرفاروق اصغر،میزان بینک کی زونل و ضلعی انتظامیہ ،سیاسی وسماجی شخصیات ملک خالد سعید خان تھہیم،ملک ذیشان خان تھہیم،مہر خضر حیات ہراج،حاجی محمد ارشد سنگا،حفیظ سعیدی،چوہدری محمد قاسم ارائیں ،ملک سہیل عباس کھوکھر ،میاں حسن مشتاق سہو،مہر مجاہد حسین اُترا،جاوید خان پڑھیار،مہر عمران محمود اُترا،ملک یوسف بھٹی،حق نواز لپرا سمیت اہل علاقہ کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔نمازجنازہ کے بعد مرحوم کو اُن کے آبائی قبرستان میں سپر د خاک کردیا گیا ۔بینک منیجر ملک محسن خان تھہیم ،سید گروپ کے مرکزی رہنما ملک طاہر خان تھہیم اور مسعود خان تھہیم کے بڑے بھائی تھے اور انہوں نے اپنے پس ماندگان میں بیوہ،دو بیٹے اور دو بیٹیاں سوگوار چھوڑے ہیں۔چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخرامام،قائد سید گروپ وممبر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر سید خاور علی شاہ،صوبائی وزیر سید حسین جہانیاں گردیزی ،ممبر پنجاب بار کونسل حاجی عبدالعزیز خان پنیاں ایڈووکیٹ نے مرحوم کے المناک حادثہ میں انتقال پر ملک طاہر خان تھہیم اور ان کے دیگر سوگواران سے تعزیت کرتے ہوئے ان کے غم میں برابر شریک ہونے کا اظہار کیا ہے۔مظفر گڑھ سے نامہ نگار کے مطابق ڈسٹرکٹ کمپلیکس مظفرگڑھ میں حادثہ,کرنٹ لگنے سے ایک شخص جانبحق, ڈسٹرکٹ کمپلیکس کے گراسی پلاٹ میں واقع پانی کی موٹر کو چھونے سے ایک شخص کو کرنٹ لگ گیا. جسے فی الفور 1122 کے ذریعے ہسپتال منتقل کیا گیا مگر وہ جانبر نہ ہو سکا اور جاں بحق ہوگیا .تنویر نامی یہ شخص ضلع کچہری مظفرگڑھ ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت میں کسی مقدمے کی پیروی کے سلسلے میں آیا تھا. ترجمان ضلعی حکومت نے کہا کہ کل پانی کی موٹر میں کرنٹ آنے کی شکایت ملی تھی فوری طور پر محکمہ بلڈنگز کے الیکٹریشن کو اطلاع کئی گئی. صبح اور شام کی شفٹ کی دونوں الیکٹریشن نے موٹر کا معائنہ کیا مگر فالٹ کو دور نہ کیا. ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ نے واقعہ کا فی الفور نوٹس لیا اور انکے کے حکم پر فرائض میں غفلت برتنے پر دونوں الیکٹریشن کے خلاف ایف آئی آر درج کرکے گرفتار کر لیا گیا ہے. جبکہ ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ نے اسسٹنٹ کمشنر مظفرگڑھ, ایس ڈی او بلڈنگز اور ایس ڈی او میپکو پر مشتمل ایک انکوائری کمیٹی قائم کردی ہے جو آج شام تک ڈپٹی کمشنر کو رپورٹ پیش کرے گی. رپورٹ کی روشنی میں ذمہ داروں کے خلاف مزید قانونی کارروائی کی جائے گی۔ دریں اثنا ڈی سی آفس کی برقی موٹر کا کرنٹ لگنے سے سائل جاں بحق،افسران نے محکمہ بلڈنگز کے 2 ورک چارج ملازمین کو گرفتار کروا دیا،ایس ڈی او،سب انجنئیر،ڈسٹرکٹ ناظر کو بچا لیا گیا،ورک چارج ملازمین کا احتجاج،گرفتار ملازمین کی رہائی کا مطالبہ،موٹر شارٹ ہونے پر کنکشن کاٹ دیا گیا تھا بعد میں کسی نے تاریں جوڑ دیں ہم بے قصور ہیں،گرفتار اظہر حسین،شفیق الرحمن کا موقف،تفصیل کے مطابق گزشتہ روز ڈی سی آفس میں آیا ہواسائل پانی پینے کی خاطر جیسے ہی موٹر کے قریب آیا کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہو گیا،ڈپٹی کمشنر آفس کے جملہ انتظامات ڈسٹرکٹ ناظر کے سپرد ہیں اور بلڈنگ سے متعلقہ امور ایس ڈی او فہد علیم،اوور سئیےر عبدالحکیم کے پاس ہیں،اہم غفلت سے انسانی جان کے ضیاع پر ڈپٹی کمشنر آفس کے افسران بالا نے ڈسٹرکٹ ناظر،ایس ڈی او،سب انجنئیےر کو بچا کر ورک چارج ملازمین اظہر حسین اور شفیق الرحمن کو پولیس تھانہ سٹی کے حوالے کر دیا اور مبینہ غفلت کے ذمہ دار بھی مذکورہ ملازمین کو ٹھہرا دیا گیا،اعلی افسران کی اس ناانصافی پر محکمہ بلڈنگز کے32 ورک چارج ملازمین نے نمائندے کو بتایا کہ ایک تو ہمیں کئی کئی ماہ سے تنخواہ نہیں ملتی،دس دس سال سے نوکری کے باوجود ہمیں مستقل نہیں کیا گیا الٹا قتل جیسے سنگین نوعیت کے مقدمے میں ورک چارج ملازمین کو پھنسا دیا گیا ہے جو کہ سراسر نا انصافی ہے ہماری ڈی پی اور سے اپیل ہے کہ وہ انکوائری کریں،تھانے میں بند ملازمین نے بتایا کہ انہوں نے بدھ کی رات کو شکایت ملنے پر موٹر کا کنکشن کاٹ دیا تھا صبح کو پتہ نہیں کس نے دوبارہ تاریں لگا دیں ہم بے گناہ اور حالات کے مارے ہوئے ہیں مستقل ہونے کی آس پر نوکری کر رہے ہیں اعلی افسران ہم پر ترس کریں۔۔ کوٹ چھٹہ سے نمائندہ پاکستان کے مطابق گھر میں رکھے فریج سے برف نکالنے والے 27سالہ نوجوان کرنٹ لگنے سے جاں بحق ۔ تفصیل کے مطابق کوٹ چھٹہ کی نوحی بستی جلبانی مدینہ چوک کے رہائشی 27سالہ دلاور عباس جلبانی صبح سویرے اٹھ کر فرج سے برف نکالنے کی کوشش کی تو اچانک فریج شار ٹ ہونے سے بجلی ان کے ہاتھوں کو چمٹ گئی ۔جو کافی دیر چیختا پکارتا رہا ۔ گھر والوں کی مدد سے دلاور عباس کو بے ہوشی کی حالت میں ٹی ایچ کیو کوٹ چھٹہ لایا گیا ۔ جو ہسپتال میں ہی دم توڑ گیا۔ مرحوم شادی شدہ تھا اور رہنماءپی ٹی آئی محمد شفیع جلبانی کا بھانجا تھا۔ جام پور سے نامہ نگار کے مطابق تھانہ صدرجام پور کی حدود کوٹ طاہر میں چوری کے شعبہ پرمخالفین کی اندھا دھندفائرنگ سے 1شخص جانبحق 3شدید زخمی جانبحق وزخمی ٹی ایچ کیو اسپتال منتقل پولیس نے اسپتال پہنچ کر کارروائی کا آغازکردی تفصیل کے مطابق تھانہ صدرجام پورکی حدود کوٹ طاہرمیں چوری کے شعبہ میں اسلحہ سے مسلح 6افراد قبول، رشید، سلیمان، منیر، اللہ رکھا، اور بخت علی لاکھا کی اندھا دھند فائرنگ سے ایک شخص ریاض احمد ولدغلام عباس احمدانی جانبحق جبکہ تین افراد غلام عباس، منظور احمداور ریاض ولد بڈھا شدید زخمی ہوگئے واقعہ کی اطلاع پر ریسکیو 1122نے جانبحق اور زخمیوں کو ٹی ایچ کیو اسپتال منتقل کردیا پولیس نے بھی ہسپتال پہنچ کر اپنی کارروائی شروع کردی جبکہ ملزمان فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ بوریوالا سے تحصیل رپورٹر کے مطابق لڈن روڑ پربی ٹی ایم قبرستان موڑ کے قریب تیز رفتار ڈالے کی موٹر سائیکل کو ٹکر ، ایک جاں بحق دو افراد شدید زخمی۔تفصیلات کے مطابق نواحی گاو¿ں 447 ای بی کا رہائشی محمد عامر لڈن روڈ پر موٹر سائیکل پر سوار ہو کر اپنے دوسا تھیوں کے ہمراہ جا رہا تھا کہ جب وہ بی ٹی ایم قبرستان موڑ کے قریب پہنچا تو وہ تیز رفتار ڈالے کی زد میں آ گیا جس کے نتیجہ میں محمد عامر موقع پر جاں بحق ہو گیا جبکہ دو افراد شدید زخمی ہو گئے۔ اطلاع ملتے ہی ریسکیو 1122 نے نعش اور زخمیوں کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال بورےوالا منتقل کر دیا گیا ہے جبکہ ٹرک ڈرائیور موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا۔پولیس مصروف تفتیش ہے۔ بارہ میل سے سپیشل رپورٹر کے مطابق بارہ میل وگردونواح میں منشیات کی روک تھام نہ ہو سکی ایک اور نوجوان کی ہلاکت اہلیان علاقہ کا شدید احتجاج تفصیل کے مطابق بارہ میل،مست پور،بلاولپور،جودھپور ودیگر علاقوں میں منشیات کی روک تھام نہ ہو سکی ان علاقوں میں منشیات کی کھلے عام فروخت جاری ہے پولیس تھانہ بارہ میل ان منشیات فروشوں کے خلاف بے بس نظر آ تی ہے گزشتہ روز بھی نواحی علاقہ جودھپور کا رہائشی محمد اصغر جاں بحق ہو گیا اہلیان علاقہ نے شدید احتجاج کرتے ہوئے ڈی پی او خانیوال سے منشیات کی روک تھام کے لیے فوری اقدامات کا مطالبہ کیا ہے ۔ رحیم یار خان ، لیاقت پور سے نمائندہ پاکستان ، نامہ نگا رکے مطابق ٹریفک حادثات مےں شدید زخمی ہونے والے باپ بیٹا سمیت تین افراد جاں بحق، 22 زیر علاج۔ تفصیل کے مطابق پہلا حادثہ تحصیل خانپور چک125/1L کے رہائشی 50 سالہ محمد خلیل اور اس کے بیٹے 38سالہ فرزند علی کے ساتھ پیش آیا جو اپنی گاڑی پر سوارہوکر کام کے سلسلہ میں جارہے تھے کہ سامنے سے آنیوالی تیز رفتار کار سے دھماکے سے ٹکرا گئے جس کے نتیجہ مےں دونوں باپ بیٹا محمد خلیل اورفرزندعلی موقع پر ہی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑگئے جبکہ دوسراحادثہ چک83 پی کے رہائشی40سالہ محمدارشد کے ساتھ پیش آیا جو اپنی سائیکل پرسوار ہوکر سنی پل کام کے سلسلہ مےں جارہاتھا کہ پیچھے سے آنیوالی تیزرفتار کار نے بے قابوہوکر روند ڈالا جس کے نتیجہ مےں وہ شدید زخمی ہوگیا۔ ورثاءنے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود محمدارشد جانبرنہ ہوپایااوردم توڑگیاجبکہ مختلف حادثات مےں زخمی ہونے والے 22 افراد جن میں احسان پور کی رہائشی12سالہ حفصہ بی بی، حسن کالونی کی3سالہ فاطمہ بی بی، محلہ قاضیاں کی40سالہ صابرہ بی بی، گلشن عثمان کی35سالہ رقیہ بی بی، کشمورکا22سالہ ہادے جی، کموں شہید کا18سالہ عنایت اللہ، صادق آباد کا65سالہ سردار احمد، راجن پورکا50سالہ رب نواز، گلشن دبئی کا22 سالہ بشارت علی، تھلی چوک کا25سالہ محمدنوید، عباسیہ بنگلوز کا19 سالہ محمداحسان، میر پور ماتھیلو کا36سالہ ظفراللہ، عباسیہ ٹاﺅن کا40سالہ غلام اصغر، چک13پی کا24سالہ محمد سفیان، ظفر آباد کالونی کا22سالہ محمداسامہ، لیاقت پور کا32سالہ عبیدالرحمن، 40سالہ محمدخورشید اور40سالہ عبدالرزاق شامل ہےں۔ ان افراد کو ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔ جبکہ لاہور سے کراچی جانیوالی تیزگام ایکسپریس ٹرین کے سامنے آکر28سالہ نامعلوم شخص نے خودکشی کرلی، اطلاع پاکر ریلوے پولیس نے لاش تحویل میں لیکر پوسٹ مارٹم کیلئے تحصیل ہسپتال منتقل کردی، تفصیل کے مطابق لاہور سے کراچی جانیوالی تیزگام ایکسپریس خانپور اسٹیشن سے روانہ ہوئی تو اچانک 28سالہ نامعلوم شخص نے ٹرین کے آگے چھلانگ لگادی جس کے نتیجہ مےں زد مےں آکر موقع پر ہی دم توڑگیا۔ اطلاع پاکر ریلوے پولیس نے موقع پر پہنچ کر لاش تحویل میں لیکر پوسٹ مارٹم اور شناخت کے لئے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال خانپور منتقل کردی۔ ہارون آباد سے تحصیل رپورٹر کے مطابق ) نواحی گا¶ں چک نمبر 261 ایچ ار ہاکڑاہ نہر پل میں نامعلوم چالیس سالہ شخص کی نعش برآمد۔لاش پل میں پھنسی ہوئی تھی پولیس اور ریسکیو نے موقع پر پہنچ کر لاش نکال کر ٹی ایچ کیو ہسپتال پہنچا دی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -