چونیاں واقعہ میں ملوث ملزم رحیمیار خان سے گرفتار‘ سخت حفاظتی انتظامات میں قصور منتقل

چونیاں واقعہ میں ملوث ملزم رحیمیار خان سے گرفتار‘ سخت حفاظتی انتظامات میں ...

  

رحیم یارخان(بیورو رپورٹ)چونیاں واقعہ میں ملوث مبینہ ملزم کوگزشتہ سے پیوشتہ روز رحیم یارخان کے نواحی علاقہ سے زمیندارکے گھر سے گرفتارکرکیاگیاکو پولیس نے فول پروف نگرانی میں قصور منتقل کردیا، ڈی این اے ٹیسٹ کے بعد حتمی رائے قائم کی جائے گی، ڈی پی او قصور،تفصیل کے مطابق حساس اداروں کی نشاندہی پر ضلع قصور کی تحصیل چونیاں میں بچوں کو اغواء کرنے کے بعد زیادتی کانشانہ بناکر قتل کرنے(بقیہ نمبر12صفحہ12پر)

والا مبینہ ملزم سجاد احمد کوگزشتہ سے پیوشتہ شب تھانہ کوٹ سمابہ کی حدود امین آباد کے زمیندار محمد حنیف وڑائچ کے گھر پر چھاپہ مارکر گرفتارکیاگیا تھا،مبینہ ملزم نامعلوم مقام پرمنتقل کردیا گیا تھا زمیندار کو تھانہ کی حوالات میں بند کردیاتھا،واضح رہے کہ مبینہ ملزم سجاد احمد ضلع قصور تحصیل چونیاں کارہائشی ہے جوکہ ڈی این اے ٹیسٹ کی لسٹ میں شارٹ تھا اور فرار ہوکر رحیم یارخان کے نواحی علاقہ میں روپوش ہوگیا تھا۔ مبینہ ملزم کے والد نے تحقیقاتی ٹیم کو مشتبہ ہونے کا خدشہ ظاہر کیا۔جس پر پولیس فوری طور پر متحرک ہوگئی اور خفیہ اطلاع پر نشاندہی ہونے پر زمیندار محمد حنیف وڑائچ کے گھرپر دونوں تحصیلوں کے ایس پی ایز سمیت پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ چھاپہ مارکر مبینہ ملزم اور زمیندار کو گرفتارکرلیا تھا۔پولیس کی فول پروف سیکورٹی کی نگرانی میں مبینہ ملزم سجاد احمد کو قصورمنتقل کردیاگیا۔ڈی پی او قصور زاہد نواز مروٹ نے ویڈیو بیان میں بتایا کہ مبینہ ملزم سجاد احمد کو دیگر گرفتار ہونے والے مشتبہ افراد کی طرح گرفتارکیاگیا ہے حقائق ڈی این اے ٹیسٹ کے بعد واضح ہونگے۔

چونیاں واقعہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -