دل کی بڑھتی بیماریوں میں کمی کیلئے طرز زندگی تبدیلی لانا ہو گی : گورنر سندھ 

دل کی بڑھتی بیماریوں میں کمی کیلئے طرز زندگی تبدیلی لانا ہو گی : گورنر سندھ 

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ پاکستان میں دل کی بڑھتی بیماریوں میں کمی کے لیے خوراک اور طرزِ زندگی میں تبدیلی لانا ہوگی، کراچی سے کچرے کی صفائی ایک دن کا نہیں روز کا کام ہے، صفائی مہم اچھی چیز ہے، مگر کچرا اٹھانے کا کام مستقل اور روزانہ کی بنیاد پر ہونا چاہیے، انہوں نے کراچی کے لیے آرٹیکل 149لاگو کرنے کی تجویز کوئی پر تبصرہ کرنے سے انکار کردیا، گورنر سندھ ڈا یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز میں عالمی یومِ امراضِ قلب کے حوالے سے شروع ہونیوالی آگہی مہم میں سیمنار سے خطاب اور میڈیا کے سوالوں کے جواب دے رہے تھے، اس موقع پر ڈا یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر محمد سعید قریشی، ڈا یونیورسٹی کے رجسٹرار پروفیسر امان اللہ عباسی، پرنسپل ڈا میڈیکل کالج پروفیسر امجد سراج میمن، ڈائریکٹر اسپورٹس پروفیسر مکرم علی، پروفیسر شجاع فرخ، پروفیسر نصرت شاہ سمیت سینئر فیکلٹی ممبرز اور طلبہ کی بڑی تعداد موجود تھی۔گورنر سندھ نے کہا کہ پہلے مرحلے میں سندھ کے پانچ اضلاع میں صحت کارڈ دینے کا اغاز کیا جائے گا، تھر سے صحت کارڈ دینے کا آغاز کیا جائے گا۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ مراد علی شاہ نے شہر میں کچرا اٹھانے کی مہم شروع کی ہے، یہ اچھی بات ہے، مگر یہ کام مستقل بنیادوں پر کرنے کی ضرورت ہے، اور مستقل طورپر کچرا اٹھانے کا کام ساری دینا میں میئر کی ذمے داری ہوتی ہے، یہاں بھی ذمہ داری میئر کو ہی دی جانی چاہیے، ایک اور سوال کے جواب میں انہوں کہا کہ وزیرِ اعظم عمران خان تین فلائی اوورز گرین لائن کے متوازی دوسرے منصوبے، لیاری اور ماری پور کے 2ترقیاتی منصوبوں سمیت 5منصوبوں کا افتتاح کرنے جلد کراچی آئیں گے، اس سلسلے میں ان سے وقت مانگا ہے، ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ جامعات ہی نہیں ملک بھر میں مجموعی طور پر گرانٹس میں مالی کٹوتی کی گئی ہے،قبل ازیں آگہی سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے گورنر سندھ نے کہا کہ دل کا کام صرف جسم کو خون کی فراہمی نہیں بلکہ یہ جسم کی رہنمائی بھی کرتا ہے، دل کے فیصلے سچائی پر مبنی ہوتے ہیں، اور اپنے بھائیوں کی مشکلات پر دل دکھتا اور دل روتا بھی ہے، انہو ں کہا کہ چھوٹے دل والے چھوٹی بات کرتے ہیں اور بڑے دل والے بڑی بات کرتے ہیں، دل کی سچائی ہی انسان کو بہادر بناتی ہے، یہی وجہ ہے کہ عمران خان امریکا میں بیٹھ کر بہادری کے ساتھ کشمیر کا مقدمہ لڑ رہے ہیں۔ گورنر سندھ نے کہا کہ پاکستان میں دل کی بیماریاں بڑھ رہی ہیں، ڈا یونیورسٹی کی جانب سے آگہی مہم کا آغاز خوش آئند ہے ابھی سیمینار میں پروفیسر محمد سعید قریشی اور دیگر ماہرین نے بتایا کہ دل کی بیماریوں کی روک تھام کے لیے ہمیں اپنا لائف اسٹائل تبدیل کرنا ہوگا، پروفیسر محمد سعید قریشی نے کہا کہ پاکستان میں دل کی بڑھتی بیماریوں کی بنیادی وجہ ہماری خوراک کی عادات اور ورزش سے عاری طرزِ زندگی ہے، خوراک سے غیر صحت مند اجزانکال کر متوازن غذا لی جائے اور مناسب ورزش باقائدگی سے کی جائے تو پاکستان میں دل کے امراض سے اموات میں بھی کمی آئے گی، ہیڈآف کارڈیولوجی ڈا یونیوورسٹی پروفیسر نواز لاشاری نے کہا کہ خوراک میں ایسی چیزیں نکال دی جائیں جو دل کے لیے نقصان دہ ہیں، دن میں 35منٹ چہل قدمی ضروری ہے، سگریٹ نوشی، پان، گٹکے سے اجتناب ضروری ہے، اس کے ساتھ ساتھ ماحول کو بھی بہتر بنایا جائے اسی لیے ہم نے آج درخت لگانے کی مہم بھی شروع کی ہے، رجسٹرارڈا یونیورسٹی پروفیسر امان اللہ عباسی نے کہا کہ غیر متوازن غذاں اور ورزش نہ کرنے کے باعث پیٹ کا بڑھنا خطرے کی علامت ہے، پیٹ بڑھنے کامطلب ہے کہ آپ دل کی بیماریوں کے راستے پر چل پڑے ہیں، گورنر سندھ نے ڈا میڈیکل کالج میں درخت بھی لگایا اور تقریبات کا آغاز کرنے کے لیے کیک بھی کاٹا، تقریب کے آخر میں گورنر سندھ کو وائس چانسلر پروفیسر محمد سعید قریشی نے اجرک اور ٹوپی بھی پیش کی۔

مزید :

صفحہ اول -