’عمران خان نے پہلی بار کسی بھی عالمی فورم پر اس چیز پر آواز بلند کی ہے‘ بھارت کا ہندو پروفیسر بھی کپتان کا معترف ہوگیا

’عمران خان نے پہلی بار کسی بھی عالمی فورم پر اس چیز پر آواز بلند کی ہے‘ بھارت ...
’عمران خان نے پہلی بار کسی بھی عالمی فورم پر اس چیز پر آواز بلند کی ہے‘ بھارت کا ہندو پروفیسر بھی کپتان کا معترف ہوگیا

  

سٹاک ہوم (ڈیلی پاکستان آن لائن)سویڈن کی یونیورسٹی میں تعینات ہندو پرفیسر اشو ک سوائن نے کہاہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے کشمیر پربات کرنے کے ساتھ ساتھ آر ایس ایس کی دہشتگردی کو بھی نشانہ بنایا ۔

اپنے ایک ٹوئٹ میں پروفیسر اشوک سوائن نے کہاہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں تو قع کے عین مطابق کشمیر کی صورتحال پر زیادہ بات کی ۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر پربات کرنے کے ساتھ ساتھ عمران خان نے آر ایس ایس کو بھی نشانہ بنایا ۔

اشوک سوائن کا کہنا تھا کہ عمران خان نے آر ایس ایس کے بارے میں کہا کہ یہ دہشتگردوں کو تربیت فراہم کرتی ہے جو مسلمانوں کوقتل کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ تاریخ میں پہلی مرتبہ ہواہے کہ ہندوتواکی دہشتگردی کا ناصر ف اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ذکر کیا گیا بلکہ یہ کسی بھی عا لمی تنظیم کے پلیٹ فار م پر ہونے والا پہلا بیان ہے ۔

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے جنرل اسمبلی میںاپنے خطاب کے دوران آر ایس ایس کاتذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ مودی آر ایس ایس کا لائف ٹائم ممبر ہے اور آر ایس ایس وہ جماعت ہے جس کی بنیاد ہٹلر اور میسولینی کے نظریات پر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آر ایس ایس بھارت میں مسلمانوں اور عیسائیوں سے نفرت کرتی ہے اور یہ بات سرعام کی جاتی ہے، آر ایس ایس نے گاندھی کو قتل کیا تھا ۔ ان کا نظریہ نفرت اور قتل وغارت پر مبنی ہے ۔ان کا کہناتھا کہ جب مودی گجرات کا وزیر اعلیٰ بنا تو اس آر ایس ایس نے گجرات میں دوہزار سے زائد مسلمانوں کوقتل کردیا تھا، بھارتی سیاسی جماعت کانگریس نے آر ایس ایس کو دہشگرد تنظیم قراردیاتھا ۔

مزید :

بین الاقوامی -