مولانا فضل الرحمن سے ٹیلیفونک رابطہ اے پی سی فیصلوں پر عملدرآمد پر گفتگو، اب ملک کو مزید تماشہ نہیں بننے دینگے: نواز شریف 

مولانا فضل الرحمن سے ٹیلیفونک رابطہ اے پی سی فیصلوں پر عملدرآمد پر گفتگو، اب ...

  

 لندن، اسلام آباد(سٹاف رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) قائد مسلم لیگ(ن) سابق وزیر اعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ مجھے سزا دیتے دیتے ملک کو ڈبو دیا، اب ہم اس ملک کو مزید تماشہ نہیں بننے دیں گے۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک ٹوئٹ میں نوازشریف نے مختلف کلپس پر مشتمل ایک ویڈیو بھی شیئر کی اور ساتھ لکھا یہ ہے حقیقت اس احتساب کی جس کے ذریعے آپ کے تین با ر منتخب وزیر اعظم کو انتقام کا نشانہ بنایا گیا، سزائیں دلوائیں گئیں اور اشتہاری قرار دیا گیا۔بعدازاں نواز شریف نے جمعیت علماء اسلام (ف) کے امیر مولانا فضل الرحمن سے ٹیلیفونک رابطہ کیا جس میں اسمبلیوں سے استعفوں کیلئے کمیٹی کے قیام پر تبادلہ خیال کیا گیا۔تفصیلات کے مطا بق ملک بھر کی اپوز یشن کی طرف سے بلائی گئی اے پی سی کے بعد پہلی بار سابق وزیراعظم نواز شریف اور مولانا فضل الرحمان کے درمیان را بطہ ہوا، رابطے کے دوران دونوں رہنماؤں کے درمیان ملکی سیاسی صورتحال اور اپوزیشن کی تحریک پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ذرائع کے مطابق ا ے پی سی کے بعد کی صورتحال اور اپوزیشن کی تحریک کے ایکشن پلان پر بھی مشاورت کی گئی، اپوزیشن کے نئے اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کی سربراہی پر بھی مشاورت ہوئی۔ اسمبلیوں سے استعفوں کیلئے کمیٹی کے قیام پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ذرائع کا کہناہے کہ دونوں رہنما ؤ ں میں اے پی سی کے فیصلوں پر مکمل عملدرامد کیلئے جامع روڈ میپ پر اتفاق کیا گیا۔

نواز شریف

مزید :

صفحہ اول -