نیب ان ایکشن، سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی شیر علی گورچانی کیخلاف شکنجہ تیار 

  نیب ان ایکشن، سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی شیر علی گورچانی کیخلاف شکنجہ ...

  

 جام پور (نامہ نگار) نیب نے سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی شیر علی گورچانی اور ان کے خاندان کے خلاف تحقیقات کادائر ہ کار وسیع کر دیا ہے۔ محکمہ مال سے تمام جائیداد کی تفصیل مانگ لی گئیں۔ تفصیل کے مطابق نیب نے سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی سردار شیر علی گورچانی کے خلاف تحقیقات کادائرہ کار وسیع کر دیا ہے۔ محکمہ مال سے سے نیب کو دیے جانے والے ریکارڈ کے مطابق سابق ڈپٹی سپیکر شیر علی گورچانی کی ایک سو بیس کنال حاجی پور۔ پندرہ کنال نور پور منجو والا۔ چار سول چوالیس کنال بستی جوئیہ۔ دو کنال کی کوٹھی جوہرٹاون جام پور۔ محمد پور میں ایک کنال کا پلاٹ۔ ڈیرہ غازی خان کے علاقے موضع گدائی میں تین کنال۔ گلشن کالونی ڈیرہ غازی خان میں سردار شیر زمان گورچانی کی ایک سو باون کنال سون واہ موضع میں۔ جبکہ ان کے والد سردار پرویز اقبال گورچانی کی پانچ سو ستاون کنال نوشہرہ میں اراضی کی نشاندھی کی گئی۔ محکمہ مال کی طرف سے نیب کو بھجوائے جانے والے مراسلہ میں سابق ڈپٹی سپیکر شیر علی گورچانی کی ملتان اور لاہور میں بھی کوٹھی کا ممکنہ طور پر ہونے کا انکشاف کیا گیا۔ مخالفین نے سوشل میڈیا پر بیان بازی شروع کر دی ہے۔ سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی شیر علی گورچانی نے گرفتاری سے بچنے کے لیے ہاتھ پاوں مارنا شروع کر دیاہے۔ ان کے ورکروں کے مطابق شیر علی گورچانی نے وکلاء سے قانونی مشاورت کا عمل شروع کر دیا جلد عدالتوں سے رجوع کرکے قانونی تحفظ حاصل کیا جائے گا۔ 

شکنجہ تیار

مزید :

صفحہ اول -