تحصیل روجھان: مہنگائی میں اضافہ‘ غریبوں کی چیخیں‘ صورتحال سنگین 

      تحصیل روجھان: مہنگائی میں اضافہ‘ غریبوں کی چیخیں‘ صورتحال سنگین 

  

 روجھان (نمائندہ پاکستان) پنجاب کی آخری پسماندہ تحصیل روجھان جہاں فیکٹری یا زراعت اور دوکانداری کے علاوہ دیگر ذریعہ روزگار نہیں ہے غریب پسماندہ لوگ دن بدن سبزیوں،دالوں ادوایات گوشت کے ریٹ بڑھنے سے شدید پریشان ہیں طویل(بقیہ نمبر31صفحہ 6پر)

 لاک ڈوان کے دوران چھوٹے دوکاندار طبقہ کارباری مراکز بند ہونے کے باعث اپنی جمع پونجی گھریلو اخراجات کی مد میں کھا گئے واضع رہے کہ روجھان میں صرف دو سے تین دوکاندار بڑے تاجروں کی لسٹ میں آتے ہیں جبکہ 95 فیصد دوکاندار کی اگر ایک دن دوکان بند ہوجائے تو دوسرے دن چولہا جلنا مشکل ہوجاتا ہے طویل لاک ڈوان کے دوران مسلسل دکانوں کی بندش نے دکاندار طبقے کو تباہ کردیا ہے جبکہ لاک ڈوان کے فوری بعد ٹڈی دل نے سینکڑوں کاشتکاروں کی فصلات کو شدید نقصان پہنچایا ابھی سود پر رقم حاصل کرکے کاشتکاروں کسانوں نے اپنی فصلیں آباد کی تھی دریائے سندھ اور رود کوہی کے سیلابی ریلوں نے غریب کسانوں کی لاکھوں ایکڑ کپاس پیاز اور دیگر قیمتی کاشت فصلیں تباہ کردیں اور گھروں کو شدید پہنچایا روجھان میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھنے والے طبقہ کی تمام کاروباری زندگی معطل ہے شہر ویران پڑا ہے زراعت اور کاروبار کو اٹھانے کے لیے موجودہ حکومت نے کوئی ٹھوس اقدامات نہیں کیے جبکہ نوکریاں دینے کی اوسط بھی کم ہے زرعت اور کاروباری زندگی تباہ ہونے سے روجھان میں موجود ہر انسان معاشی بحران کا شکار ہے روجھان کی غریب عوام کی گزر بسر انتہائی مشکل حالات میں ہے دوسری طرف  دالوں سبزیوں آٹے گندم چینی اور ادوایات کے ریٹ بڑھانے سے عوام کی کمر ٹوٹ گئی ہے روجھان کی عوام وڈیرہ نعمت گل، وقاص چودہدری شریف لنجوانی طایر زمکانی شبیر لاٹھانی غلام قادر،ظریف ملک رفیق سمیت دیگر افراد نے وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار سے مطالبہ کیا ہے کہ ٹڈی دل سیلاب سے تباہ کسانوں کے لیے امدادی پیکج فوری فراہم کریں جبکہ لاک ڈوان سے متاثر دوکانداروں کے لیے بھی امدادی پیکج کا اعلان کیا جائے۔

چیخیں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -