تبدیلی سرکار نے عوام کو ذہنی  مریض بنا دیا،عبدالقادر شاہین

تبدیلی سرکار نے عوام کو ذہنی  مریض بنا دیا،عبدالقادر شاہین

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)پاکستان پیپلز پارٹی فیڈرل کونسل کے رکن و چیف کووارڈینیٹر جنوبی پنجاب عبدالقادرشاہین نے کہا ہے کہ تبدیلی سرکار کی ناقص پالیسیوں نے قوم کو ذہنی مریض بنا کر رکھ دیا ہے تو دوسری جانب دودھ کی نہریں بہانے کی دعویدار حکومت نے ملک کو تباہی کے دہانے لاکھڑا کیا ہے۔عمران خان اپوزیشن میں تھے تو بیڈ گورننس کے جو الزامات لگاتے رہے وہ آج حقیقت بن کر خود انکے سامنے آرہے ہیں۔

حکومت نام کی کوئی چیز ملک میں دکھائی نہیں دے رہی پورے ملک کا نظام ایڈہاک ازم پر چلانے کے نیے تجربہ پر گامزن ہے۔  سلیکٹڈ وزیراعظم نے رنگیلے شاہ کے دور کی یاد تازہ کرتے ہوئے اپنے اردگرد ایسے لوگوں کا ٹولہ اکٹھا کر رکھا ہے جو انکی واہ واہ اور اپوزیشن جماعتوں کی قیادت پر الزام تراشی کرسکے ان سے غریب عوام کیلئے کسی کا ریلیف یا بہتری کی امید رکھنا فضول ہے۔انہوں نے کہا کہ ایم ٹی آئی ایکٹ طبی اصلاحات کے نام پر صوبائی حکومت کا ظالمانہ اقدام ہے۔ ایک طرف حکمران صحت کارڈ کا واویلہ کر رہے ہیں تو دوسری طرف ہسپتالوں میں عوام کو صحت کی بنیادی سہولیات بھی میسر نہیں حکمرانوں کی عدم توجہ کے باعث ڈینگی کی وبا? ہر طرف پھیل چکی ہے جس پر کنٹرول کرنے میں حکومت ناکام ہوچکی ہے۔ جس طرح حکومت نے صحت کے بجٹ میں کمی کی تھی اس کا خمیازہ آج عوام بھگت رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف گرینڈ ہیلتھ الائینس کی تحریک کی مکمل حمائیت کرتی ہے۔ اور ساتھ ہی اس بات پر زور دیتی ہے کہ اس تحریک کے باعث ہسپتالوں کی ایمرجنسی سروسز کو بند نہ کیا جائے صحت کی بنیادی سہولیات فراہم کرنا ڈاکٹرز, نرسز اور پیرا میڈیکس کے ساتھ ساتھ حکومت کی اولین زمہ داری ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -