مردان یوتھ پارلیمنٹ کا ختم بنوت کے گستاخوں، جنسی درندوں کو سرعام پھانسی دینے کا مطالبہ 

مردان یوتھ پارلیمنٹ کا ختم بنوت کے گستاخوں، جنسی درندوں کو سرعام پھانسی ...

  

مردان (بیورورپورٹ) مردان یوتھ پارلیمنٹ نے ختم نبوت کے گستاخوں، جنسی درندوں کو سرعام پھانسی دینے،صوبائی کابینہ میں مردان کو نمائندگی دینے اورکامیاب جوان پروگرام کے قرضوں سے سود کے خاتمے کے مطالبات کرتے ہوئے کہاہے کہ مردان کے ترقیاتی منصوبوں کو جلد از جلد فنڈز کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔انہوں نے اجلاس میں ضلعی انتظامیہ اور صوبائی اسمبلی کے ارکان کی عدم شرکت کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ مسائل کے حل کے لئے ادارے تو موجود ہے لیکن اداروں کے نمائندے اجلاس میں شرکت کی زخمت تک گوارا نہیں کرتے جو افسوسناک ہے۔یوتھ پارلیمنٹ کا اجلاس کنونیئر شیر شاہ کی صدارت میں ہوا جس میں تحریک انصاف کے نوجوان سینیٹر ذیشان خانزادہ نے نو منتخب عہدیداروں سے حلف لیا۔اجلاس سے صوبائی اسمبلی کے سٹینڈنگ کمیٹی کے چیئرمین اور ایم پی اے ابراھیم خٹک،مردان یوتھ پارلیمنٹ کے چیئرمین ارشاد احمد،صدر ریاض الرحمان،یوتھ جرگہ کے چیئرمین غلام حبیب،،سپیشل پرسن عدنان خان،سہیل خان،حیدر مایار،سجاد ہوتی،مردان پریس کلب کے سابق صدر اور سینئر صحافی مسرت عاصی،پریس کلب کے جنرل سیکرٹری ایم بشیر عادل،جمعیت علما ء اسلا م کے ضلعی سیکرٹری اطلاعات مولانا قیصر الدین،پرائیویٹ سکول ایسوسی ایشن کے صدر نصیر آفریدی اور دیگر ممبران نے بھی خطاب کیا۔مقررین نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ مردان میڈیکل کمپلیکس اور دیگر خودمختار ادارے اختیارات کا ناجائز استعمال کررہے ہیں۔غیر قانونی بھرتیوں اور ہسپتالوں میں سہولیات کے نہ ہونے سے مردان کے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔انہوں نے لیبر کے لئے بنائے گئے قوانین پر عملدرآمد کا بھی مطالبہ کیا۔۔انہوں نے کہاکہ مردان میڈیکل کمپلیکس کے بورڈ آف گورنرز غیر قانونی بھرتیوں میں مصروف ہیں لیکن کوئی آواز اٹھانے والا نہیں ہے۔انہوں نے ہسپتالوں میں ہیپاٹائٹس اور ریبز ویکسئین کے نہ ہونے کی بھی شدید الفاظ میں مذمت کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -