محکمہ ایکسائز و ٹیکسیشن میں اربوں کی کرپشن کا کیس، ایکسائز ایجنٹ خرم کی طلبی 

  محکمہ ایکسائز و ٹیکسیشن میں اربوں کی کرپشن کا کیس، ایکسائز ایجنٹ خرم کی ...

  

لاہور(سپیشل رپورٹر)محکمہ ایکسائز و ٹیکسیشن میں جعلی گاڑیوں کی رجسٹریشن کے حوالے سے اربوں روپے کی کرپشن کیس میں بڑی پیش رفت ایکسائز ایجنٹ خرم گجر کو 30 ستمبر کو اینٹی کرپشن لاہور ریجن اے نے طلب کر لیا قومی خزانے کو اربوں کا نقصان پہنچانے اور اختیارات کا غلط استعمال کرنے پر  محکمہ ایکسائزکے تین افسران پر پہلے ہی پرچہ درج کیا جا چکا ہے اینٹی کرپشن ڈائریکٹر ریجن لاہور اے احمر کیفی کے مطابق   ای ٹی او قاری غلام رسول اور انسپکٹر وحید مئیو نے ملی بھگت کر کے خرم گجر کو راتوں رات ارب پتی بنا دیا ڈائریکٹر ریجن لاہور کا کہنا ہے  کہ ایکسائز افسران خرم گجر کو ہزاروں کی تعداد میں جعلی واؤچر پر گاڑیوں کی رجسٹریشن بکس جاری کرتے رہے   ایکسائزمیں بڑے پیمانے پر بوگس گاڑیوں کی رجسٹریشن پر تحقیقات کا دائرہ کار وسیع کر دیا گیا ہے ڈی جی گوہر نفیس نے کہا ہے کہ  ہزاروں کی تعداد میں جعلی نیلام گاڑیوں کی رجسٹریشن پاکستان میں وائٹ کالر کرائم کی تاریخ کا ایک بڑا سکینڈل ہے اینٹی کرپشن پنجاب میگا سکینڈل میں قوم کا لْوٹا ہوا پیسہ ریکور کرکے وزیر اعظم پاکستان کے تعلیم فنڈ میں جمع کرائے گا وہ دن گئے جب بڑے چور بچ جاتے تھے اور پٹواری اور کلرک پکڑے جاتے تھے ڈائریکٹر جنرل گوہر نفیس نے کہا ہے کہ اینٹی کرپشن بدل چکا ہے، کرپٹ عناصر کا بلا تفریق کڑا احتساب ہو گا۔

ایکسائز ایجنٹ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -