گوجرانوالہ: اینٹی کرپشن کی کارروائی، سرکاری افسروں سے لاکھوں کی لیکوری 

  گوجرانوالہ: اینٹی کرپشن کی کارروائی، سرکاری افسروں سے لاکھوں کی لیکوری 

  

گوجرانوالہ(بیورورپورٹ) ڈائریکٹر جنرل اینٹی کرپشن پنجاب گوہر نفیس کی سرکاری نادہندگان سے ریکوری کے لئے چلائی گئی مہم زوروں شوروں سے جاری ہے اور اس سلسلہ میں گذشتہ روز ریجنل ڈائریکٹر اینٹی کرپشن گوجرانوالہ رائے نعیم اللہ بھٹی کی کے احکامات کی روشنی میں سرکل آفیسر گوجرانوالہ مرزا محمد زمان نے اپنے سٹاف کے ہمراہ میٹروپولیٹن کارپوریشن کے مختلف ہیڈز کے ڈیفالٹرز کو ٹریس کرکے ان سے 15لاکھ 90ہزار روپے کے سرکاری واجبات خزانہ سرکار میں جمع کروا دیئے ہیں جبکہ شعبہ پلاننگ،انجینئرنگ، ٹیکسسز اور دیگر شعبوں کے سرکاری نا دہندگان اور ڈیفالٹرز سے وصولی کے لئے میٹرو پولیٹن کارپوریشن کے تمام ریکارڈ کی جانچ پڑتال کے ساتھ ساتھ ڈیفالٹر ز کی اصلی لسٹ بھی طلب کر لی ہے ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ اینٹی کرپشن حکام کے نوٹس میں بات آئی ہے کہ شعبہ بلڈنگز کے 9افسران اور بلڈنگز انسپکٹروں نے مبینہ طور پرسینکڑوں نئی تعمیر ہونے والی بلڈنگز جس میں میرج ہال، فیکٹریاں، کارخانے، پلازے، کمرشل دوکانیں،مال و شاپنگ سنٹرز، گودام وغیرہ شامل ہیں کے مالکان سے ملی بھگت کرکے این او سی،کنورشن فیس، کمرشلائزیشن فیسوں، نقشوں اور دیگر مدوں میں کروڑوں روپے رشوت لے کر سرکاری خزانے کو 2ارب سے زائد مالیت کا نقصان پہنچایا ہے جبکہ کسی بھی انکوائری سے بچنے کے لئے ان کے بیشتر سرکاری ریکارڈ کونہ صرف دائیں بائیں کیاگیا ہے بلکہ حکومتی رجسٹروں میں بوگس اور فرضی انٹریوں کا اندراج کرکے حکام بالا کو سب اچھا کی رپورٹیں بھی ارسال ہو چکی ہیں جس کا فوری ایکشن لیتے ہوئے شعبہ بلڈنگز کے سابقہ اور موجودہ کئی افسران کے علاوہ بلڈنگز انسپکٹروں کے خلاف بھی خفیہ طور پر کرپشن کی لسٹیں مرتب کرنے کا کام سپیڈی طور پر شروع کر دیا گیا ہے تاہم اس سلسلہ میں ریجنل ڈائریکٹر رائے نعیم اللہ بھٹی کا کہنا ہے کہ بہت جلد گوجرانوالہ ریجن کے سرکاری زمینوں پر قابض بااثر شخصیات سے واگزاری کے لئے ریجن کی تمام ٹیموں پر مشتمل ایک گرینڈ ایکشن کیا جائے گاجس کی وہ براہ راست نگرانی کریں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -