دس ارب سے زائد کی مشکوک سرمایہ کاری ، مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے ایک بار پھر سلیمان شہباز کو طلب کر لیا

دس ارب سے زائد کی مشکوک سرمایہ کاری ، مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے ایک بار پھر ...
دس ارب سے زائد کی مشکوک سرمایہ کاری ، مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے ایک بار پھر سلیمان شہباز کو طلب کر لیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)العربیہ شوگر مل سے  10 ارب سے زائد کی مشکوک سرمایہ کاری ،مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے مسلم لیگ ن کے صدر میاں شہباز شریف کے صاحبزادے سلیمان شہباز کو یکم اکتوبر کو پھر طلب کر لیا ،طلبی کے نوٹس پر سلیمان شہباز نے بھی شرط رکھ دی۔

نجی ٹی وی "جیو نیوز "کے مطابق ایف آئی اے،ایس ای سی پی اور سٹیٹ بینک کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم  نے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کے صاحبزادے  سلیمان شہباز کو یک اکتوبر کو طلب کر لیا ہے۔مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے سلیمان شہباز  سےالعربیہ شوگر مل سے 10 ارب سے زائد کی مشکوک سرمایہ کاری کی تفصیلات طلب کی گئی ہیں۔سلیمان شہباز کو بھیجے جانے والے نوٹس میں کہا گیا ہے کہ یکم اکتوبر کو  وہ ذاتی حیثیت میں پیش ہوں اور تمام ضروری دستاویزات ساتھ لائیں، اگر سلیمان شہباز پیش نہ ہوئے تو سمجھا جائےگا کہ ان کے پاس اپنے دفاع کے لیے کچھ نہیں ہے ۔یاد رہے کہ سلیمان شہباز کو اس سے قبل  رواں ماہ 25 ستمبر کو ایف آئی اے کے لاہور دفتر میں طلب کیا گیا تھا لیکن وہ پیش نہیں ہوئے تھے۔

دوسری طرف مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی جانب سے یکم اکتوبر کو  طلبی کے نوٹس پر سلیمان شہباز کا کہنا ہے کہ شوگرسکینڈل کے اصل کردار حکومت میں موجود ہیں، ایف آئی اے پہلے وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کو نوٹس دےاورکابینہ میں موجود دیگر لوگوں اور اصل ذمہ داروں کو بلائےپھر ہمیں بھی بلائے۔سلیمان شہباز کا کہنا ہےکہ مجھے  نوٹس ملا ہی نہیں، تحقیقاتی ٹیم لندن آکر میرا انٹرویو کرلے، خود پیش ہوں گا یا وکیل کے ذریعے جواب دوں گا؟ اس کا فیصلہ نہیں کیا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -