پر اسرار آواز نے ویانا میں امریکی انٹیلی جنس یونٹ کے سربراہ کو برطرف کرا دیا

پر اسرار آواز نے ویانا میں امریکی انٹیلی جنس یونٹ کے سربراہ کو برطرف کرا دیا
پر اسرار آواز نے ویانا میں امریکی انٹیلی جنس یونٹ کے سربراہ کو برطرف کرا دیا

  

واشنگٹن ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) ویانا میں پر اسرار آواز کا راز جاننے میں ناکامی پر امریکی وفاقی تحقیقاتی ادارے’سی آئی اے‘ ویانا میں یونٹ کے سربراہ کو برطرف کر دیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے امریکی اخبار  "واشنگٹن پوسٹ کے حوالے سے کہا کہ آسٹریا کے دارالحکومت میں درجنوں امریکیوں اور ان کے بچوں نے پر اسرار آواز ’’سینڈروم‘‘ کی علامات کی اطلاع دی ، یہ کیس پہلی بار 2016 میں کیوبا کے ہوانا میں امریکی سفارت خانے میں پیش آیا تھا،  متاثرین کے مطابق  وہ  ایک سمت سے آنے والی گونج کی آوازیں سنتے ہیں اور اپنے سر میں دباؤ محسوس کرتے ہیں۔ بعض متاثرین نے متلی ، سر چکرانے اور تھکاوٹ کی شکایت کی ۔

اخبار کے مطابق ویانا میں پر اسرار سینڈروم کیسز کی تعداد ہوانا کے دوسرے کسی بھی شہر سے زیادہ ہے، ’سی آئی اے‘ نے فوری کسی پیش رفت پر تبصرہ نہیں کیا ہے۔

اخبار کے مطابق امریکی حکام کا کہنا ہے کہ ویانا میں سینئر افسر کی برطرفی امریکی قیادت کو ہوانا سینڈروم کو سنجیدہ لینے سے متعلق اہم پیغام دے گی ۔ گزشتہ ہفتے کے آغاز میں سی آئی اے کے ایک افسر کو ایجنسی کے ڈائریکٹر ولیم جے برنس کے ہمراہ بھارت گیا تھا نے سینڈروم کی علامات کی اطلاع دی تھی ۔

العربیہ کے مطابق سال 2018 میں ایک رپورٹ میں بتایا گیا کہ کیوبا میں امریکی اور کینیڈین سفیروں پر مبینہ آوازوں سے حملے کیوبن سونک اٹیکس یا ہوانا سینڈروم کہا جاتا ہے، تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ جو امریکی اور کینیڈین سفیر ہوانا میں کام کر چکے ہیں ان کے دماغ پانچ فیصد تک سکڑ گئے ۔

مزید :

بین الاقوامی -