نواز شریف کی پاکستان میں کورونا ویکسی نیشن کی انٹری کے معاملے میں اہم انکشافات سامنے آگئے , نجی ٹی وی کا دعویٰ

نواز شریف کی پاکستان میں کورونا ویکسی نیشن کی انٹری کے معاملے میں اہم ...
نواز شریف کی پاکستان میں کورونا ویکسی نیشن کی انٹری کے معاملے میں اہم انکشافات سامنے آگئے , نجی ٹی وی کا دعویٰ

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) لندن میں موجود مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف کی لاہور کے ہسپتال میں کورونا ویکسین کی جعلی انٹری کے معاملے پر انکوائری کمیٹی نے ابتدائی رپورٹ مرتب کرلی جس میں اہم انکشافات سامنے آئے ہیں ۔ 

نجی ٹی وی ہم نیوز نے ذرائع کے حوالے سے کہا کہ  نواز شریف کی جعلی ویکسین انٹری سے آٹھ منٹ قبل نامعلوم سم سے میسج  کر کے  پن کوڈ حاصل کیا گیا، شام چار بج کر چار منٹ پر اسی کوڈ کے ذریعے نواز شریف کی کورونا ویکسی نیشن کی انٹری کی گئی ۔

نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا کہ ویکسی نیشن کے دس منٹ بعد پانچ سموں سے ویکسی نیشن کی تصدیق کیلئے 1166 پر مسیج بھیجے گئے ،حساس اداروں نے پانچوں سموں کا ریکارڈ قبضے میں لے لیا ہے ، اب تحقیقات کی جا رہی ہیں کہ ان پانچوں سمز سے کن کن افراد سے رابطے کئے گئے ہیں ، کیا ان کا کسی سیاسی جماعت کے ساتھ کوئی تعلق ہے یا نہیں ۔

واضح رہے کہ لندن میں موجود نواز شریف کی لاہور کے ہسپتال میں ویکسی نیشن کی جعلی انٹری نے ملک میں کھلبلی مچا دی تھی ، معاملے پر وزیرصحت پنجاب یاسمین راشد نے موقف دیا تھا کہ  سابق وزیراعظم نوازشریف کی ویکسینیشن کے لیے کینیڈا سے فون آیا اور وارڈ بوائے نے انٹری کی۔ کینیڈا سے نوید نامی شخص نے فون کرکے آئی ڈی کارڈ کا اندراج کرایا اورآپریٹر سے کہاکہ یہ نمبر اس کے والد کا ہے، ہم نیوز کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے یاسمین راشد نے بتا یا کہ انٹری کسی کمپیوٹر آپریٹر نے نہیں بلکہ وارڈ بوائے نے کی اورایسا اس نے ذاتی تعلقات کی بنا پر کیا ۔

مزید :

اہم خبریں -سیاست -