سراج رئیسانی کی ریلی میں 150 لوگوں کی جان لینے والے خود کش حملے کا مبینہ ماسٹر مائنڈ مارا گیا، یہ کون تھا؟ بڑا انکشاف

سراج رئیسانی کی ریلی میں 150 لوگوں کی جان لینے والے خود کش حملے کا مبینہ ماسٹر ...
سراج رئیسانی کی ریلی میں 150 لوگوں کی جان لینے والے خود کش حملے کا مبینہ ماسٹر مائنڈ مارا گیا، یہ کون تھا؟ بڑا انکشاف

  

کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک)سنہ 2018ءکے انتخابات کے دوران مستونگ، بلوچستان میں انتخابی ریلی پر ہونے والے خودکش حملے کا مبینہ ماسٹر مائنڈ ہلاک ہو گیا۔ ایکسپریس ٹربیون کے مطابق 13جولائی 2018ءکو سراج رئیسانی کی انتخابی ریلی پر ہونے والے اس خودکش حملے میں 150سے زائد لوگ جاں بحق اور 200سے زائد زخمی ہو گئے تھے۔ اس حملے کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم داعش نے قبول کی تھی۔

رپورٹ کے مطابق ممتاز عرف موٹا پہلوان نامی دہشت گرد مبینہ طور پر اس حملے کا ماسٹرمائنڈ تھا جو گزشتہ روز ضلع مستونگ ہی میں سکیورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں موت کے گھاٹ اتر گیا ہے۔ڈپٹی کمشنر مستونگ الیاس کوبزئی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے اس دہشت گرد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔ ڈپٹی کمشنر کا کہنا تھا کہ ”گزشتہ روز سکیورٹی فورسز کے ساتھ دہشت گردوں کی جھڑپ ہوئی جس میں اس دہشت گرد کی ہلاکت ہوئی۔“

مزید :

علاقائی -بلوچستان -کوئٹہ -