سرمایہ مائیکروفنانس کیخلاف بہت زیادہ شرح سود کی سینکڑوں شکایات موصول ہوگئیں

سرمایہ مائیکروفنانس کیخلاف بہت زیادہ شرح سود کی سینکڑوں شکایات موصول ہوگئیں
سرمایہ مائیکروفنانس کیخلاف بہت زیادہ شرح سود کی سینکڑوں شکایات موصول ہوگئیں
سورس: Twitter/@SECPakistan

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) سکیورٹیزاینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) کو سرمایہ مائیکروفنانس (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے خلاف 288شکایات موصول ہوئیں جن میں سے 283کا ازالہ کر دیا گیا۔ نیوز ویب سائٹ’پروپاکستانی‘ کے مطابق ان میں کسٹمرز کی طرف سے زیادہ تر شکایات بہت زیادہ شرح سود اور دیگر چارجز کے متعلق کی گئی تھیں۔

ڈیٹا میں بتایا گیا ہے کہ سرمایہ مائیکروفنانس ایک نان بینکنگ فنانس کمپنی ہے جسے یکم فروری 2022ءکو ایس ای سی پی کی طرف سے لائسنس جاری کیا گیا۔ رپورٹ کے مطابق زیادہ تر کیسز میں کسٹمرز جب قرض واپس ادا کرنے میں ناکام ہوئے، تب انہوں نے کمپنی کے خلاف ایس ای سی پی کو شکایت درج کرادی۔ کئی کسٹمرز نے کمپنی کی طرف سے ریکوری کے لیے ناروا حربے اختیار کرنے کی بھی شکایت کی۔

واضح رہے کہ سرمایہ مائیکروفنانس نامی یہ کمپنی اس وقت دو ایپلی کیشنز’ایزی لون‘ (Easy Loan)اور ’پی کے لون‘ (PK Loan)چلا رہی ہے اور ان کے ذریعے لوگوں کو 3ہزار روپے سے 30ہزار روپے تک کا قرض دے رہی ہے۔ کسٹمرز کو یہ قرض 7دن سے 90دن کے لیے دیا جاتا ہے۔ 

مزید :

بزنس -